شام: حمص پر فوج کی دوبارہ بمباری

آخری وقت اشاعت:  جمعـء 5 اکتوبر 2012 ,‭ 15:59 GMT 20:59 PST
حمص

بمباری صبح سویرے شروع ہوئی

شام کے شہر حمص سے ملنے والے اطلاعات کے مطابق فوج نے شہر کو شدید بمباری کا نشانہ بنایا ہے۔

تنظیم ’دا سیریئن آبزرواٹری فار ہیومن رائٹس‘ کا کہناہے کہ حمص میں خالدیہ کے علاقے پر فضائی بمباری کے علاوہ آرٹلری حملے بھی کیے گئے۔

حمص میں صدر بشار الاسد کے مخالفین میں سے ایک ابو رامی نے خبر رساں ادرے اے پی کو بتایا کہ یہ بمباری صبح فجر کے وقت شروع ہوئی اور بہت شدت سے کی گئی۔

فوج حمص پر پہلے بھی کئی مرتبہ بمباری کر چکی ہے لیکن اپریل کے بعد ان حملوں میں کمی آئی تھی اور فوج کی توجہ شام کے دوسرے شہروں کی جانب منتقل ہو گئی تھی۔

جمعہ کوحمص پر حملوں کے بارے میں وہاں مقیم باغیوں نے بتایا کہ یہ پانچ مہینوں میں ہونے والے شدید ترین حملے ہیں۔

جمعہ کو حمص کے علاوہ دمشق، حلب، حما اور ادلب پر بھی حملے کیے گئے۔ حلب میں باغی ٹھکانوں پر بھاری بمباری کی گئی۔

شام کے سرکاری ٹیلی وئژن نے خبروں میں ان حملوں کو ایسی کارروائی بتایا جو کہ حکومت ’دہشت گردوں اور کرائے کے جنگجوؤں کو نکالنے کے لیے کر رہی ہے۔‘

شام میں حکومت مخالف گروپوں کا کہنا ہے کہ جمعہ کو کئی احتجاجی مظاہرے بھی کیے گئے۔

باغیوں نے یہ دعوی بھی کیا ہے کہ وہ دمشق کے قریب ایک فضائی بیس پر قابض ہونے میں کامیاب ہو ئے ہیں جہاں سے ان کو میزائل راکٹوں کی بڑی تعددا ملی ہے۔آ

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔