آگسٹا کمیشن: سرکوزی کےساتھی پر فرد جرم عائد

آخری وقت اشاعت:  پير 29 اکتوبر 2012 ,‭ 18:48 GMT 23:48 PST

فرانس کے سابق صدر نکولا سرکوزي کے ايک ساتھي کے خلاف پاکستان کو آبدوزيں بيچنے کے سودے میں صدارتی انتخابی مہم کے لیے فنڈز اکھٹے کرنے کے الزام میں فرد جرم عائد کر دي گئي ہے۔

فرانس کي ايک عدالت نے پیر کو چار گھنٹے کي سماعت کے بعد نکولا بازير کے خلاف فرد جرم عائد کرنے کا فيصلہ کيا ہے۔

فرانس کی اپوزيشن الزام عائد کرتي رہی ہے کہ 2002 میں کراچی میں آگسٹا آبدوزوں کے منصوبے پر کام کرنے والے گیارہ فرانسیسی انجنیئروں کی ہلاکت کی وجہ سب ميرين کے سودے میں خفيہ طور طے ہونی والی کمیشن کی عدم ادائیگی کی وجہ سے ہوئی تھی۔

نکولا بازير پر الزام ہے کہ انہوں نے نکولا سکوزي کي انتخابی مہم کے لیے غير قانونی فنڈ حاصل کيے۔

لگسمبرگ پولیس نے اپنی ایک رپورٹ میں کہا تھا کہ نکولا سرکوزی نے1995 میں بطور وزیرِ خزانہ دو ایسی کمپنیاں قائم کرنے کی منظوری دی جنہوں نے اسلحہ کےسودے سے کمیشن حاصل کیا اور پھر اس رقم کا کچھ حصہ 1995 کی انتخابی مہم پرخرچ کیا۔ نکولا سرکوزی اس وقت فرانس کے وزیرِ خزانہ تھے۔

فرانس کے تحقیقاتی ادارے 2008 سے ان الزامات کو پرکھنے کی کوشش کر رہے ہیں۔

سابق صدر سرکوزی نے کسی بھی غیر قانونی سرگرمی میں ملوث ہونےکی تردید کرتے ہیں۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔