شام کی فضائیہ کے جنرل کا قتل

آخری وقت اشاعت:  منگل 30 اکتوبر 2012 ,‭ 16:39 GMT 21:39 PST
شام میں جنگ کی صورتِ حال

شام میں ہونے والی جنگ بندی کی متواتر خلاف ورزی ہوئی ہے

شام کے سرکاری ٹی وی کے مطابق شام کی فضائیہ کے ایک جنرل کو باغیوں نے دمشق کے مضافات میں حملہ کر کے ہلاک کر دیا ہے۔

عبداللہ محمود الخالدی کو سوموار کو رات گئے رکن الدین کے علاقے میں گولی مار کر ہلاک کیا گیا۔

یہ حملہ باغیوں کی جانب سے اعلی حکام پر کیے گئے حملوں کی ایک کڑی لگتا ہے جس میں کئی اعلیٰ حکام کو نشانہ بنایا گیا ہے۔

جولائی میں دمشق ہی میں ایک حملے میں صدر بشار الاصد کے برادر نسبتی آصف شوکت ایک بم دھماکے کے نتیجے میں ہلاک ہو گئے تھے۔

اسی حملے میں شامی وزیر دفاع بھی ہلاک ہوئے تھے۔

شام کے سرکاری ٹی وی کے مطابق جنرل عبداللہ ایک ماہر ہوا باز سمجھے جاتے تھے۔

جنرل عبداللہ شام کی فضائیہ کی کمان کا بھی حصہ تھے۔

دوسری جانب شام میں حزبِ مخالف کے کارکنوں نے الزام لگایا کہ عید الاضحیٰ کے موقع پر حکومتی افواج کی جانب سے جنگ بندی کی خلاف ورزیاں کی گئیں۔

اقوامِ متحدہ کی کوششوں سے جمعے کو شامی حکومت اور باغیوں کے درمیان عید الاضحیٰ کے موقع پر جنگ بندی کروائی گئی تھی جس کی دمشق میں ہونے والے کار بم دھماکے اور لڑائی کے باعث خلاف ورزی ہوئی تھی۔

شام میں فریقین کے مابین ہونے والی اس عارضی جنگ بندی کے پہلے روز ہی ایک سو پچاس افراد کی ہلاکت کی اطلاع سامنے آئیں تھیں۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔