’امیر و غریب کے درمیان معاشی فرق بڑھ رہا ہے‘

آخری وقت اشاعت:  جمعرات 1 نومبر 2012 ,‭ 05:39 GMT 10:39 PST

سیو دی چلڈرن کے مطابق امیر وغریب کے درمیان معاشی فرق بچوں کے لیے نقصان دہ ہے

بچوں کے لیے کام کرنے والی تنظیم ’سیو دی چلڈرن‘ کا کہنا ہے کہ امارت اور غربت کے درمیان فرق اس وقت گزشتہ بیس برس میں سب سے زیادہ ہے اور اس میں مسلسل اضافہ ہو رہا ہے۔

تنظیم کی حال ہی میں جاری کردہ ایک رپورٹ کے مطابق یہ فرق خاص طور پر بچوں میں بھی دکھائی دے رہا ہے اور اس سے ان کی صحت اور پرورش پر اثر پڑ رہا ہے۔

یہ رپورٹ اقوام متحدہ کے ایک پینل کے غربت پر ہونے والے اجلاس سے پہلے جاری کی گئی ہے۔

رپورٹ میں اس بات کو تسلیم کیا گیا ہے کہ کچھ مسائل جیسا کہ بچوں کی اموات پر کسی حد تک قابو پانے میں پیش رفت ہوئی ہے لیکن اس کا اثر مختلف معاشی طبقات پر ایک جیسا نہیں ہے۔

سیو دی چلڈرن کا کہنا ہے کہ یہ طبقاتی فرق معیار زندگی کو بہتر کرنے میں ایک بڑی رکاوٹ بن سکتا ہے۔

سیو دی چلڈرن کے چیف ایگزیکٹو جسٹن فورستھ نے کہا کہ ’حالیہ کچھ دہائیوں میں دنیا نے بچوں کی اموات پر بہت حد تک قابو پا لیا ہے اور بچوں کے لیے بہتر زندگی کے مواقع پیدا کیے ہیں اور ہم ایک ایسے موڑ پر پہنچے ہیں کہ بچوں کی اموات پر مکمل طور قابو پا لیں۔‘

انھوں نے مزید بتایا کہ ’جب تک طبقاتی فرق کے مسائل حل نہ ہوں ترقی کرنے کے لیے کوئی بھی نظام کامیاب نہیں ہو گا۔ دولت کی غیر مساوی تقسیم کی وجہ سے ممالک اور پوری دنیا صحیح معنوں میں نہ ترقی کر سکے گی اور نہ انہیں خوشحالی کا احساس ہو گا۔‘

سیو دی چلڈرن کی تحقیق کے مطابق 1990 سے ترقی پذیر 32 ممالک میں اکثر امراء نے قومی مالیت میں اپنا حصہ بڑھایا ہے جبکہ اس دوران ہر پانچویں ملک میں غریبوں کی آمدن کم ہوئی ہے۔

ادارے کا کہنا ہے کہ بچوں اور ان کی افزائش کے حوالے سے معاشی فرق بہت واضح ہو جاتا ہے۔

مثال کے طور پر تنزانیہ کے امیروں میں بچوں کی اموات کی شرح 1000 میں 135 سے کم ہو کر 90 پر آ گئی ہے جبکہ غریب ترین لوگوں میں یہ شرح 1000 میں 140 سے 137 پر آئی ہے جو کہ کوئی قابل ذکر ترقی نہیں ہے۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔