امریکی صدارتی انتخاب اور اہم مسائل

آخری وقت اشاعت:  بدھ 7 نومبر 2012 ,‭ 19:09 GMT 00:09 PST

امریکہ میں صدر کا انتخاب فیصلہ کرتا ہے کہ اگلے چار سال تک امریکہ کی پالیسی ان اہم امور کے بارے میں کیا رہے گی جو داخلی طور پر اثر انداز ہونگے ہی دنیا کو بھی متاثر کریں گے۔

براک اوباما

براک اوباما

معیشت

اوباما نے امریکن ریکوری اور ری انویسٹمنٹ یعنی معیشت کی بحالی اور دوبارہ سرمایہ کاری کے بل پر دستخط کیے جسے سٹملس بھی کہا جاتا ہے۔ اس منصوبے کے تحت سات سو اڑسٹھ ارب ڈالر کی ٹیکسوں میس چھوٹ اور تعلیم، بنیادی ڈھانچے، توانائی، صحت اور دوسرے منصوبوں میں سرمایہ کاری کی گئی ہے۔ اوباما نے امریکی آٹو انڈسٹری یعنی گاڑیاں بنانے والی کمپنیوں کی مالی مدد کے منصوبے کی منظوری دی۔ کولمبیا پانامہ اور جنوبی کوریا کے ساتھ تجارتی معاہدوں پر دستخط کیے۔

ٹیکس

اوباما نے اکثر امریکیوں کے لیے لاگو ہونے والے کئی ٹیکسوں میں کٹوتی کی، انہوں نے ڈھائی لاکھ ڈالر سے زائد آمدنی رکھنے والے خاندانوں کے لیے سابق صدر بش کے دور کی دی ہوئی ٹیکسوں میں کٹوتی کو واپس لے لیا اور امریکی سرمایہ کار وارن بفے کے نام پر دیا جانے والا ایک قاعدہ تجویز کیا جس کی رو سے اس ٹیکس کو بھی واپس لیا جس کے تحت کروڑ پتی امریکیوں کے لاگو ہونے ٹیکسوں کی شرح میں کافی اضافہ ہوگا۔

ایران

اوباما نے تہیہ کیا تھا کہ وہ ایران کو جوہری ہتھیار تیار کرنے سے ہر صورت روکیں گے۔ اسی طرح اوباما اسرائیل یا امریکہ کی جانب سے ایران کی جوہری تنصیبات پر مستقبل قریب میں حملے کے مخالف ہیں۔ اوباما اس معاملے کے سفارتی حل پر زور دیتے ہیں لیکن ساتھ ہی ان کا یہ کہنا ہے کہ ’اس حل کے لیے وقت تیزی سے گزر رہا ہے‘ اور کچھ بھی خارج از امکان نہیں ہے۔ انہوں نے ایران کے خلاف نئی پابندیوں پر دستخط کیے ہیں جن میں ایران کے مرکزی بنک، تیل کی آمد اور مالیاتی نظام کے خلاف پابندیاں شامل ہیں۔

قومی سلامتی اور جنگ

انہوں نے اسامہ بن لادن سمیت القاعدہ کے تقریباً تمام رہنماؤں کو قتل کرنے کروایا، عراق سے امریکی افواج کے انخلا کو مکمل کیا اور کانگرس میں موجود ریپبلکنز کے ساتھ دفاعی شعبے کے اخراجات میں اگلے دس سال کے دوران اڑتالیس کروڑ ستر لاکھ ڈالر کی کمی پر اتفاق کیا۔

افغانستان

اوباما نے اقدار میں آنے کے بعد افغانستان میں امریکی افواج کی تعداد میں اضافہ کیا لیکن اب بتدریج کمی کے ساتھ انہوں نے دو ہزار چودہ میں مکمل انخلا کا اعلان کر رکھا ہے۔

صحت عامہ

دو ہزار دس میں صحت عامہ کے قانون میں نمایاں تبدیلوں پر مبنی ایک قانون منظور کیا جس کی رو سے فرد واحد کو بیمہ کروانے کا کہا گیا اگر اس کے پاس پہلے ہی سے صحت کا بیمہ نہیں ہے۔ اس کے ساتھ ساتھ اس قانون میں بیمہ کمپنیوں پر پابندی لگا دی گئی کہ وہ کسی شخص کو پہلے سے موجود بیماری کی وجہ سے بیمہ دینے سے انکار نہیں کر سکتیں۔ یہ قانون ریاستوں کو پہلے سے موجود میڈی کیڈ نامی عوامی بیمہ پروگرام میں امداد دینے کی بھی بات کرتا ہے۔

غیر قانونی تارکین وطن

اوباما نے آئین کے تحت مفوضہ اعلیٰ انتظامی اختیارات استعمال کرتے ہوئے اور کانگریس میں موجود ریپبلکنز کو نظر انداز کرتے ہوئے بعض نوجوان تارکین وطن کو قانونی حیثیت دینے کی اجازت دی ہے۔ اس کے ساتھ ساتھ انہوں نے غیر قانونی تارکینِ وطن کو امریکہ بدرکرنے میں بہت تیزی آئی ہے۔

اسقاط حمل

اوباما اسقاط حمل کے حقوق کی حمایت کرتے ہیں اور انہوں نے سپریم کورٹ میں دو ایسے ججوں کو تعینات کیا ہے جو اسقاط حمل کے حامی ہیں۔

توانائی

اوباما نئی قسم کی توانائی کے منصوبوں کے حق میں ہیں جیسا کہ ہوائی چکیاں اور کاروں کے لیے جدید بیٹریاں، اسی طرح انہوں نے کاروں کے ایندھن کے استعمال میں بہتری اور آلودگی کے اخراج پر قوانیں سخت کیے ہیں۔ انہوں نے کی سٹون تیل کی پائپ لائن بنانے کی مخالفت کی جس کے تحت خام تیل کینیڈا سے خلیج میکسیکو میں منتقل کیا جانا تھا۔ اس بارے میں ان کا یہ کہنا تھا کہ امریکہ کے پاس اتنا وقت نہیں ہے کہ وہ یہ فیصلہ کر سکے کہ اس پائپ لائن کے ماحول پر کیا اثرات مرتب ہوں گے۔

مٹ رومنی

معیشت

مٹ رومنی کا منصوبہ ٹیکس کی کٹوتیوں پر منحصر ہے، یہ اوباما کے دو ہزار دس کے قوانین کو ختم کرنے کا ارادہ رکھتے ہیں جس میں انہوں نے وال سٹریٹ اور بنکوں کے قوانین میں ترامیم کیں تھیں۔ اسی طرح وہ یہ کہتے ہیں کہ ان بہت سارے قوانین میں کمی یا خاتمہ معاشی ترقی میں اضافہ کرے گا۔ رومنی نے آٹو انڈسٹری کو مالی امداد دے کر بحران سے بچانے کی مخالفت کی تھی۔ اسی طرح یہ وفاقی حکومت کے اخراجات میں نمایاں کمی کرنے کا ارادہ رکھتے ہیں لیکن اس بارے میں بہت کم تفصیلات ہیں کہ یہ کمی کن منصوبوں میں کمی سے حاصل کی جائے گی۔

ٹیکس

رومنی بش دور کی تمام ٹیکس کٹوتیوں کو بحال کرنے کا ارادہ رکھتے ہیں، اسی طرح فرد واحد کی آمد پر ٹیکس میں بھی کٹوتی، اور سرمایہ کاری اور جائیداد پر ٹیکس کے خاتمے کی بھی تجویز دیتے ہیں۔ یہ کارپوریٹ ٹیکس میں بھی کمی کی تجویز دیتے ہیں۔ اس بارے میں غیر جانبدار ٹیکس پالیسی سنٹر کا کہنا ہے کہ اس سے زیادہ فائدہ حاصل کریں گے۔ رومنی تجویز دیتے ہیں کہ وہ ان تمام کٹوتیوں اور کمیوں کو ٹیکس کے نظام میں موجود خلاؤں کو پر کر کے کریں گے۔

ایران

رومنی کا کہنا ہے کہ ایران کا جوہری ہتھیار حاصل کرنا بالکل قابل قبول نہیں ہے۔ ان کا بھی فوجی اقدام کے بارے میں کہنا ہے کہ ’یہ راستہ موجود رہے گا‘۔ مبصرین کا خیال ہے کہ وہ ایران کے خلاف فوجی اقدام کا واضع خطرہ پیش کرتے ہیں۔ رومنی امریکی بحری جہاز بحیرۂ روم اور خلیج فارس میں گشت کے لیے بھجوائیں گے۔رومنی کا یہ بھی کہنا ہے کہ وہ ایران پر مزید پابندیاں لگانے کا مطالبہ کریں گے اور کھل کر ایران کی حزب اختلاف کے گروہوں کی حمایت کریں گے۔

قومی سلامتی اور جنگ

فوجی سازوسامان اور مزائل دفاعی نظام پر بہت زیادہ خرچ کریں گے اور پینٹاگان یا امریکی وزارت دفاع کے بجٹ میں ایک کھرب ڈالر کا اضافہ کریں گے جبکہ دفاعی شعبے کے سویلین حکام پر اخراجات کم کریں گے۔

افغانستان

ان کا یہ کہنا ہے کہ ان کا ہدف دو ہزار چودہ تک افغان حکام کو سکیورٹی کی منتقلی ہے لیکن وہ یہ وعدہ کرتے ہیں کہ وہ دو ہزار چودہ میں انخلا کے منصوبوں کا جائزہ لیں گے اور ان کی بنیاد فوجی سربراہوں کے تخمینوں پر رکھیں گے۔

صحت عامہ

رومنی اوباما کہ صحت عامہ کے قانون کو ختم کر دیں گے اگرچہ یہ قانون انہی کے میساچوسٹس میں منظور ردہ ایک ایک قانون پر مبنی ہے اور ریاستوں کو بہت ساری صحت کی پالیسیاں واپس کر دیں گے۔ ڈاکٹروں کی غلط کاریوں پر کیے جانے والے مقدمات پر حد لگائیں گے اور فرد واحد کی حوصلہ افزائی کریں گے کہ وہ بیمہ غیر سرکاری منڈی میں یا دوسری ریاستوں میں خرید سکیں جہاں اس کے دائرہ اثر میں کمی ہو اس پر اٹھنے والے اخراجات بھی کم ہوں۔

غیر قانونی تارکین وطن

انہوں نے اوباما کے نوجوان تارکین وطن کو قانونی حقوق دینے کے مخالفت کی لیکن یہ نہیں کہا کہ اسے واپس لیں گے یا نہیں۔ ان کا یہ بھی کہنا ہے کہ امریکہ کو ان غیر قانونی تارکین وطن کی زندگی اجیرن بنا دینی چاہیے تاکہ وہ تنگ آکر خود ہی واپس چلے جائیں۔

اسقاط حمل

ان کا کہنا ہے ’میری صدارت زندگی کے حق میں ہو گی‘ لیکن دو ہزار دو میں جب وہ میساچوسٹس کے گورنر کے طور پر انتخاب لڑ رہے تب انہوں نے اسقاط حمل کے حق کی حمایت کی تھی۔ اسی طرح وہ مشہور مقدمے رو بنام ویڈ کے فیصلے کو تبدیل کرے کے حق میں ہیں جس میں سپریم کورٹ نے اسقاط حمل کو قانونی طور پر جائز قرار دیا گیا تھا اور ریاستوں کو اس بات کا حق دیا تھا کہ وہ اس بارے میں میں قانون سازی کرلیں کے اسے قانونی ہونا چاہیے یا نہیں۔ اسی طرح وہ پلینڈ پیرنٹ ہوڈ وومن ہیلتھ کلینک یا ایسی خواتین کے لیے کلینک جہاں مانع حمل علاج کیے جاتے ہیں سے وفاقی امداد واپس لے لیں گے۔

توانائی

رومنی ایسے قوانین میں آسانی پیدا کریں گے جن سے کوئلہ پر چلنے والے بجلی گھروں، تیل کی تلاش اور جوہری بجلی گھروں کے قیام میں رکاوٹ پیدا ہوتی ہے۔ رومنی بحر اوقیانوس اور بحر الکاہل کے باہری حدوں میں تیل کی تلاش کی حوصلہ افزائی کریں گے۔ اسی طرح وہ کی سٹون پائپ لائن کی تعمیر کا بھی وعدہ کرتے ہیں۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔