امریکہ سے علیحدہ ہونے کی بیس پٹیشنز

آخری وقت اشاعت:  منگل 13 نومبر 2012 ,‭ 04:46 GMT 09:46 PST

ٹیکساس سے جو پٹیشن داخل کی گئی اس کی حمایت پچیس ہزار لوگوں نے کی

ایک لاکھ امریکیوں نے پٹیشن میں وائٹ ہاؤس سے مطالبہ کیا ہے کہ اجازت دی جائے کہ ان کی ریاستیں امریکہ سے علیحدہ ہو جائیں۔

یہ پٹیشن صدر براک اوباما کے دوبارہ منتخب ہونے کے بعد دی گئی ہے۔

یہ پٹیشن وائٹ ہاؤس کی ’وی دی پیپل‘ ویب سائٹ پر بھیجی گئی ہے۔

جن ریاستوں سے یہ علیحدگی کی پٹیشن دی گئی ہیں یہ وہ ریاستیں ہیں جنہوں نے صدارتی امیدوار مٹ رومنی کو ووٹ دیے تھے۔

امریکی آئئن میں کوئی ایسی شق نہیں ہے جو ریاستوں کو امریکہ سے علیحدہ ہونے کا حق دیتی ہے۔

پیر کی رات تک وائٹ ہاؤس کی جانب سے اس پٹیشن کے بارے میں کچھ نہیں کہا گیا تھا۔

علیحدگی کے لیے بیس پٹیشنز فائل کی گئیں۔ ٹیکساس سے جو پٹیشن داخل کی گئی اس کی حمایت پچیس ہزار لوگوں نے کی۔

سب سے زیادہ مقبول پٹیشن ٹیکساس ہی سے ہے۔ اس پٹیشن میں کہا گیا ہے کہ امریکیوں کے حقوق کی پامالی ہوئی ہے۔

واضح رہے کہ کسی بھی پٹیشن پر وائٹ ہاؤس کی جانب سے ردِ عمل اس وقت دیا جاتا ہے جب تک اس کی حمایت پچیس ہزار تک نہ پہنچے۔

آخری بار باضابطہ طور پر جب ریاستیں امریکہ سے علیحدہ ہوئی تھی تو اس پر خانہ جنگی چھڑ گئی تھی۔

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔