امیر افراد زیادہ ٹیکس ادا کریں: براک اوباما

آخری وقت اشاعت:  جمعرات 15 نومبر 2012 ,‭ 21:37 GMT 02:37 PST

امریکہ میں اخراجات میں کٹوتی اور ٹیکس بڑھانے کے معاملے پر بحث جاری ہے

امریکی صدر براک اوباما نے اپنے اس عزم کو دوہرایا ہے کہ دولت مند افراد حکومت کو زیادہ ٹیکس ادا کریں۔

یہ بات انہوں نے دوسری بار امریکی صدر منتخب ہونے کے بعد بدھ کو پہلی پریس کانفرنس میں کہی۔

براک اوباما نے اس بات پر زور دیا ہے کہ ایسے افراد جن کی آمدنی ڈھائی لاکھ ڈالر ہے ان پر ٹیکس کی شرح کم کرنے کے لیے جلد سے جلد قانون سازی کی جائے۔

امریکی صدر نے دو فیصد امیر ترین امریکیوں کے لیے کٹوتی کو مسترد کر دیا۔

انہوں نے کہا کہ ہمیں امیر افراد پر ٹیکس کم کرنے کی بحث کے دوران متوسط طبقے کو یرغمال نہیں بنانا چاہیے۔

براک اوباما سابق صدر جارج بش کے دور میں منظور کیے جانے وال ایک بل جس کے مطابق ایسے افراد جس کی آمدنی ڈھائی لاکھ ڈالر ہے ان پر ٹیکس کی شرح بڑھانے کے مخالف رہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ امیر افراد پر ٹیکس کی شرح بڑھانے سے ان پر کوئی فرق نہیں پڑے گا اور وہ امیر ہی رہیں گے۔

واضح رہے کہ امریکہ میں اخراجات میں کٹوتی اور ٹیکس بڑھانے کے معاملے پر بحث جاری ہے۔

امریکہ کے سابق صدر جارج ڈبلیو بش کے دور میں ٹیکس کٹوتیوں کے حوالے سے منظور کیے گئے اس بل کی مدت رواں برس ختم ہو رہی ہے جس کے تحت امریکہ فوج اور اخراجات میں خـود بخود کمی ہو جائے گی۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔