دنیا کی معمر ترین خاتون انتقال کر گئیں

آخری وقت اشاعت:  بدھ 5 دسمبر 2012 ,‭ 13:46 GMT 18:46 PST

بیسی کوپر کی پیدائش ٹینیزی میں ہوئی تھی اور بعد میں وہ جارجیا منتقل ہوئی تھیں۔

امریکہ سے تعلق رکھنے والی بیسی کوپر، جنہیں دنیا کی معمر ترین خاتون کا اعزاز حاصل ہے، ایک سو سولہ برس کی عمر میں انتقال کر گئیں۔

بیسی کوپر کے بیٹے سڈنی کوپر نے بتایا کہ ان کی والدہ کا انتقال منگل کی صبح امریکی ریاست اٹلانٹا کے ایک بزرگ افراد کے نرسنگ ہوم میں ہوا۔

انہوں نے کہا کہ وہ کچھ عرصے سے معدے کے مرض میں مبتلا تھیں۔

سڈنی کوپر کے مطابق ان کی والدہ منگل کی صبح کرسمس کی ایک ویڈیو دیکھ رہی تھیں کہ اچانک انہیں سانس کی تکلیف ہوئی، انہیں فوری طور پر آکسیجن لگائی گئی، تاہم وہ کچھ دیر بعد انتقال کر گئیں۔

واضح رہے کہ گینز بک آف ورلڈ ریکارڈ کے مطابق بیسی کوپر جنوری سنہ دو ہزار گیارہ میں دنیا کی معمر ترین خاتون بن گئی تھیں۔

اس سے پہلے گینز بک آف ورلڈ ریکارڈ کو گذشتہ سال مئی میں معلوم ہوا کہ برازیل سے تعلق رکھنے والی خاتون ماریا گومز بیسی کوپر سے اڑتالیس دن بڑی ہیں تاہم ماریا گومز کا اسی مہینے انتقال ہو گیا تھا۔

ٹینیزی میں پیدا ہونے والی بیسی کوپر پہلی جنگِ عظیم کے دوران جارجیا منتقل ہو گئی تھیں۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔