امریکی حملہ آور نے خوفناک پیغام چھوڑا تھا

آخری وقت اشاعت:  بدھ 26 دسمبر 2012 ,‭ 00:08 GMT 05:08 PST

حملہ آور نے منصوبہ بندی کے تحت اپنے گھر کو آگ لگائی تھی

امریکی ریاست نیویارک کے قصبے ویبسٹر میں فائر فائٹروں کو نشانہ بنانے والے مبینہ حملہ آور نے اپنے منصوبے کے بارے میں ایک پیغام چھوڑا تھا۔ یہ بات پولیس نے بتائی ہے۔

حملہ آور نے، جس کا نام ولیم سپینگلر بتایا گیا ہے، اپنے پیغام میں لکھا تھا کہ ’میں وہ کروں گا جو میں سب سے بہتر کر سکتا ہوں، یعنی لوگوں کو قتل کرنا۔‘

پولیس نے سپینگلر کے جلے ہوئے مکان سے ایک لاش برآمد کی ہے، جس کے بارے میں خیال ہے کہ وہ اس کی بہن کی ہے۔

حملہ آور نے پیر کے روز گولیاں چلا کر دو فائر فائٹروں کو ہلاک اور دو کو زخمی کر دیا تھا۔ وہاں سے گزرنے والا ایک پولیس اہل کار بھی گولیوں کی زد میں آ کر زخمی ہو گیا تھا۔

پولیس نے منگل کے روز ایک اخباری کانفرنس میں بتایا کہ 62 سالہ سپینگلر کے پاس تین گنیں تھیں اور وہ اپنے محلے کو جلا کر راکھ کرنا چاہتا تھا۔

اونٹاریو جھیل کے ساحل پر واقع سات گھر آگ سے خاکستر ہو گئے تھے۔

پولیس چیف گیرالڈ پکرنگ نے نامہ نگاروں کو بتایا کہ سپینگلر نے اپنے سر میں گولی مار کر خود کشی کر لی تھی اور اس کے پاس ایک 38 بور کا ریوالور، ایک 12 بور کی شاٹ گن، اور 223 بور کی ایک بش ماسٹر فلیش سپریسر رائفل تھی۔

انھوں نے کہا کہ 14 دسمبر کو کنیٹی کٹ کے قصبے نیوٹاؤن کے ایک پرائمری سکول میں اسی قسم کی رائفل سے ایک مسلح شخص نے 26 افراد کو ہلاک کر ڈالا تھا۔

پولیس کے پریس کانفرنس

پولیس چیف نے ویبسٹر میں نامہ نگاروں کو بتایا کہ حملہ آور نے دو تین صفحوں پر مبنی ایک پیغام چھوڑا ہے جس میں لکھا ہے: ’مجھے ابھی یہ دیکھنے کے لیے تیار ہونا ہے کہ میں محلے کا کتنا حصہ جلا کر راکھ کر سکتا ہوں اور وہ کر سکتا ہوں جو میں سب سے بہتر کرتا ہوں، لوگوں کو قتل کرنا۔‘

سپینگلر نے اپنی ماں کو ہتھوڑا مار کر قتل کے جرم میں جیل میں 17 سال گزارے تھے۔ تاہم 1998 میں پیرول پر رہا ہونے کے بعد انھوں نے کوئی ایسا کام نہیں کیا تھا جس سے پولیس ان کی طرف متوجہ ہوتی۔

سزایافتہ مجرم کی حیثیت سے انھیں اسلحہ رکھنے کی اجازت نہیں تھی۔

پولیس کا خیال ہے کہ انھوں نے اپنے گھر کو آگ لگا کر فائر فائٹروں کے لیے جال تیار کیا تھا۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔