ایران: واحد خاتون وزیر برخاست

آخری وقت اشاعت:  جمعـء 28 دسمبر 2012 ,‭ 21:02 GMT 02:02 PST

مرضیہ وحید دستجردی انقلابِ ایران کے بعد سے پہلی خاتون وزیر تھیں

ایران کےصدر محمود احمدی نژاد نے اپنی کابینہ کی واحد خاتون وزیر مرضیہ وحید دستجردی کو برخاست کر دیا ہے۔

ایران کے سرکاری ٹی وی کے مطابق محترمہ مرضیہ وحید ایران کی پہلی خاتون وزیر تھیں۔

محترمہ مرضیہ وحید وزیرِ صحت تھیں۔ ان کی برخاستگی کی کوئی وجہ نہیں بتائی گئی تاہم ان کی اس برخاستگی کو ان کے اس بیان سے منسلک کیا جا رہا ہے جو انہوں نے بین الاقوامی پابندیوں کے سبب ادویات کی قیمتوں میں اضافے کے بارے میں دیا تھا۔

صدر محمود احمدی نژاد نے ان کے تبصرے کو مسترد کرتے ہوئے کہا تھا کہ ان کا بجٹ ضرورت کے مطابق ہے۔

اپنی برخاستگی سے پہلے مرضیہ وحید دستجردی نے کہا تھا کہ غیر ملکی زرِمبادلہ کی شرح میں اضافے کے سبب ادویات کی قیمتوں میں اضافہ لازمی ہے۔ انہوں نے شکایت کی تھی کہ ان کا محکمہ اپنے لیے منظور شدہ غیر ملکی زرِمبادلہ حاصل کرنے میں نا کام رہا ہے۔

تاہم صدر نے ٹی وی کو دیے گئے ایک انٹرویو میں کہا تھا کہ وزارتِ صحت کو ضرورت کے مطابق رقم پہلے ہی مہیا کرا دی گئی ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ کسی کو بھی ادویات کی قیمتوں میں اضافے کا کوئی حق نہیں ہے۔

امریکہ اور یوروپی یونین نے ایران کے جوہری منصوبوں کے پیشِ نظر حال ہی میں اس پر نئی پابندیوں کا اعلان کیا تھا۔

ان کو شبہ ہے کہ ایران جوہری ہتھیار بنانے کی کوشش کر رہا ہے، جب کہ ایران اس کی تردید کرتا ہے۔

اسی بارے میں

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔