خواتین کے موٹر سائیکل پر سیدھا بیٹھنے پر پابندی

آخری وقت اشاعت:  جمعرات 3 جنوری 2013 ,‭ 12:47 GMT 17:47 PST

انڈونیشیا کے صوبے آچے میں خواتین کے موٹر سائیکل پر سیدھے بیٹھ کر سواری پر پابندی عائد کر دی گئی ہے۔

آچے میں شرعی قوانین لاگو ہیں اور یہاں اب خواتین کو حکم دیا گیا ہے کہ وہ مردوں کے پیچھے سامنے کے رخ بیٹھ کر موٹر سائیکل کی سواری نہ کریں۔

میئر سوایدی یحیٰی کا کہنا ہے کہ اس حکم نامے کا مقصد لوگوں کے اخلاقی اقدار اور رویّوں کا تحفظ کرنا ہے۔

اس نئے ضابطہ کے بارے میں آگاہ کرنے کے لیے گھروں اور دفاتر میں پرچے تقسیم کیے گئے ہیں۔

آچے انڈونیشیا کا واحد صوبہ ہے جہاں شرعی قوانین لاگو ہیں۔

نئے ضابطے کے مطابق خواتین کو موٹر سائیکل پر ایک رخ ہو کر بیٹھنے کی اجازت ہوگی تاہم وہ سامنے کے رخ مردوں کے انداز میں سواری نہیں کر سکتیں۔ بقول ان کے ’اس طرح بیٹھنے سے اسلامی اقدار کی خلاف ورزی ہوتی ہے‘۔

سوایدی کا کہنا ہے ’جب آپ ایک عورت کو موٹر سائیکل پر سیدھا بیٹھا دیکھتے ہیں تو وہ مرد دکھائی دیتی ہے جبکہ اگر وہ ایک طرف مڑ کر بیٹھے گی تو وہ عورت لگے گی‘۔

انہوں نے مزید کہا کہ ایک طرف مڑ کر بیٹھے والے مسافر گرتے بھی کم ہیں۔

مقامی حکومت ایک ماہ تک اس ضابطے کا جائزہ لے گی اور اس کے بعد اسے قانون بنا دیا جائے گا۔

اس سوال پر کہ کیا خلاف ورزی کرنے والی خواتین کو سزا دی جائے گی تو سوایدی کا کہنا تھا’ ایک مرتبہ قانون بن گیا تو اس کے لیے پابندیاں بھی ہوں گی۔‘

جکارتہ میں ایک معروف مسلم کارکن اولالبشر ابدالا اس ضابطے پر تنقید کرتے ہیں۔ انہوں نے سماجی رابطے کی سائٹ ٹوئٹر پر لکھا ’شرعی قوانین میں یہ کہیں نہیں لکھا کے موٹر سائیکل پر کیسے بیٹھنا ہے۔ قرآن اور حدیث میں بھی ایسا کچھ نہیں لکھا‘۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ اگر حکومت اس ضابطے کو قانون بنانا چاہتی ہے تو اس کے شرعی ہونے کا فیصلہ عوام کی رائے کے مطابق ہونا چاہیے۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔