ترکی کی حفاظت کے لیے پیٹریاٹ میزائل پہنچ گئے

آخری وقت اشاعت:  ہفتہ 5 جنوری 2013 ,‭ 22:06 GMT 03:06 PST

پیٹریاٹ میزائل نظام بیلاسٹک اور کروز میزائلوں کے خلاف دفاع کےلیےاستعمال کیا جاتا ہے

نیٹو نے ترکی کو شام کےطرف سے ممکنہ میزائل حملوں سےمحفوظ رکھنے کےلیے شام کی سرحد پر میزائلوں کا دفاعی نظام پیٹریاٹ نصب کرنا شروع کر دیا ہے۔

نیٹو نے پیٹریاٹ میزائل نصب کرنے کا فیصلہ ترکی کی طرف سے مدد کی درخواست کے بعد کیا ہے۔

ترکی نے گزشتہ ماہ شامی سرزمین سے ترکی میں گولے داغے جانے کے واقعات کے بعد نیٹو سے مدد کی درخواست کی تھی۔

ترکی نے خدشہ ظاہر کیا تھا کہ شام کیمیائی ہتھیاروں کا استعمال کر سکتا ہے۔

نیٹو کی یورپی کمانڈ نے کہا ہے کہ اس کے فوجی اور تنصیات ترکی پہنچنا شروع ہو چکے ہیں۔ جرمنی اور ہالینڈ پیٹریاٹ میزائل کا اپنا نظام ترکی روانہ کرنے والے ہیں۔

نیٹو کے مطابق پیٹریاٹ میزائل کےچھ نظام جنوری کےآخری ہفتے تک ترکی کی سرحد پر آپریشننل ہو چکے ہوں گے۔

شام نے کہا ہے کہ وہ کبھی بھی اپنے شہریوں کے خلاف کیمیائی ہتھیار استعمال نہیں کرے گا۔

دسمبر میں نیٹو نے کہا تھا کہ شام باغیوں کے ٹھکانوں کو تباہ کرنے کرنے کے لیے سکڈ کی طرح کے میزائلوں کا استعمال کر رہا ہے۔

پیٹریاٹ میزائل نظام بیلاسٹک اور کروز میزائلوں کے خلاف دفاع کےلیےاستعمال کیا جاتا ہے۔

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔