ایران: تیل سے حاصل ہونے والی آمدن میں کمی

آخری وقت اشاعت:  منگل 8 جنوری 2013 ,‭ 01:51 GMT 06:51 PST

امریکی سمیت کئی مغربی ممالک نے ایران سے تیل خریدنے پر پابندی عائد کر رکھی ہے

ایران کے نمایاں سیاست دان کا کہنا ہے کہ مغربی پابندیوں کی وجہ سے گذشتہ نوہ ماہ کے دوران ایران کو تیل سے حاصل ہونے والی آمدن میں پینتالیس فیصد کمی آئی ہے۔

ایران کی قومی کمیٹی برائے منصوبہ بندی اور بجٹ کے ممبر غلام رضا کاتب کا کہنا ہے کہ ملک کی مجموعی اقتصادی حالت اس وقت مشکل سے دوچار ہے۔

ایران کی وزارتِ برائے تیل نے عدم ادائیگی کی بنا پر ہوائی کمپنیوں کو تیل کی فروخت روک دی ہے جس کی وجہ سے معاشی بحران میں اضافے کا خدشہ ہے۔

غلام رضا کاتب کے مطابق وزیر تیل رستم قاسمی کی جانب سے پارلیمان میں پیش کردہ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ تیل کی برآمدات میں نمایاں کمی آئی ہے۔

انہوں نے نیم سرکاری خبر رساں ادارے اثناء نیوز سے بات کرتے ہوئے کہا کہ’رپورٹ کی بنیاد پر گذشتہ نو ماہ کے دوران تیل کی برآمد میں چالیس فیصد اور آمدن میں پینتالیس فیصد کمی آئی ہے‘۔

حالیہ ہفتوں میں ایران کے وزیر تیل نے متعدد بار کہا ہے کہ ایران تیل پر عائد پابندیوں کو بائی پاس کرنے میں کامیاب رہا ہے۔

خیال رہے کہ ایران کی آمدن کا زیادہ تر انحصار خام تیل کی برآمدات پر ہے۔

دریں اثناء بی بی سی کے جمیز رینولڈ کے مطابق کئی ائر لائنز کو اپنی پروازیں منسوخ کرنا پڑی ہیں تاہم ایران کی قومی فضائی کمپنی اس وقت پروازیں چلا رہی ہے۔

نامہ نگار کے مطابق ادائیگیوں کا معاملہ آنے والے دنوں میں حل ہوتا نظر نہیں آ رہا ہے جس سے اندازہ ہوتا ہے کہ ایران کی معشیت کو واضح مسائل کا سامنا ہے۔

ایران کے متنازع جوہری پروگرام کے باعث سنہ دو ہزار گیارہ میں امریکہ کی سربراہی میں متعدد مغربی ممالک کی ایران پر تیل کی خرید و فروخت سمیت عائد مالی پابندیوں کے بعد سے ایرانی کرنسی کی قدر میں اسی فیصد تک کمی ہو گئی ہے۔

امریکہ اور مغربی ممالک کا کہنا ہے کہ ایران اپنے جوہری پروگرام کی آڑ میں جوہری ہتھیار بنا رہا ہے تاہم ایران کا ہمیشہ سے اصرار رہا ہے کہ اس کا جوہری پروگرام پرامن مقاصد کے لیے ہے۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔