پیرس: ہم جنس پرست شادیوں کے خلاف مظاہرے

آخری وقت اشاعت:  پير 14 جنوری 2013 ,‭ 22:19 GMT 03:19 PST

فرانسیسی پولیس کے مطابق مظاہروں میں تین لاکھ چالیس ہزار افراد شریک ہوئے

فرانس کے دارالحکومت پیرس میں لاکھوں افراد نے ملک میں ہم جنس پرست جوڑوں کو شادی کرنے اور بچے گود لینے کے حقوق دیے جانے کے منصوبے کے خلاف مظاہرے کیے ہیں۔

یہ مظاہرے اتوار کو ایفل ٹاور کے ساتھ واقع ایک بڑے پارک میں ہوئے۔

فرانس کی سوشلسٹ حکومت رواں برس متعلقہ قانون میں تبدیلی کا ارادہ رکھتی ہے تاہم مظاہرین جنہیں کیتھولک چرچ اور دائیں بازوں کی حزبِ اختلاف کی حمایت حاصل ہے اس کے حق میں نہیں۔

مظاہرین کا موقف ہے کہ ایسا کرنا فرانسیسی معاشرے کی بنیاد کو نقصان پہنچائے گا۔

ان مظاہروں کے منتظمین کا دعویٰ ہے کہ ان میں ملک کے مختلف علاقوں سے آنے والے آٹھ لاکھ افراد نے حصہ لیا۔ مظاہرین نے پلے کارڈ اٹھا رکھے تھے جن پر ’فرانسوا ہمیں تمہارا قانون نہیں چاہیے‘ اور ’میرے سول کوڈ کو ہاتھ نہ لگاؤ‘ جیسے نعرے درج تھے۔

فرانسیسی پولیس کے مطابق مظاہروں میں تین لاکھ چالیس ہزار افراد شریک ہوئے اور ایک حکومتی وزیر نے کہا ہے کہ لوگوں کی تعداد منتظمین کے اندازوں سے کم رہی۔

اگرچہ فرانس میں ہم جنس افراد کی ’سول یونین‘ کی اجازت ہے لیکن فرانسوا اولاند نے اپنی صدارتی مہم کے دوران ان کے حقوق میں اضافے کا وعدہ کیا تھا۔

فی الحال فرانس میں صرف شادی شدہ جوڑے ہی بچے کو قانونی طور پر گود لے سکتے ہیں لیکن ہم جنس پرستوں کو اس کی اجازت نہیں۔ تاہم کئی یورپی ممالک جیسے برطانیہ، جرمنی اور سویڈن میں ہم جنس جوڑوں کو بچےگود لینے کی اجازت ہے۔

سیاسی جماعت یو ایم پی کے صدر ژاں فرانسوا کوپ کا کہنا ہے کہ یہ مظاہرے صدر کے لیے ایک امتحان ثابت ہوں گے کیونکہ اب یہ واضح ہے کہ لاکھوں فرانسیسی اس اصلاح کے بارے میں فکرمند ہیں۔

بی بی سی کے نامہ نگار کے مطابق چرچ اور دائیں بازو کی سیاسی جماعتوں کی حمایت کے باوجود مظاہروں کے منتظمین کا اصرار ہے کہ ان کی تحریک غیر سیاسی اور غیر مذہبی ہے اور ہم جنس پرست اس کا ہدف نہیں۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔