پھول کھانے والے بکرے کا مقدمہ خارج

آخری وقت اشاعت:  بدھ 23 جنوری 2013 ,‭ 07:08 GMT 12:08 PST

بکرا اپنے مالک کامیڈین جمبو بزوبی کے ساتھ جن کا اصل نام جیمز ڈیزرنالڈ ہے

آسٹریلیا میں ایک عدالت کی جج نے ایک بکرے کے مالک پر عائد وہ جرمانہ ختم کر دیا ہے جو اس کے پالتو جانور کے ایک باغیچے سے پھول کھانے کی وجہ سے عائد کیا گیا تھا۔

گیری نامی بکرے نے آسٹریلیا کے عجائب گھر ’میوزیم آف کنٹمپرری آرٹ‘ سڈنی کے باغیچے میں چرنا شروع کر دیا تھا اور اس پر اس کے مالک جیمز ڈیزرنالڈز کو چار سو چونسٹھ ڈالر جرمانہ کیا گیا تھا۔

یہ جرمانہ پچھلے سال اگست میں عائد کیا گیا تھا اور بکرے کے مالک پر الزام تھا کہ انہوں نے اسے سنبھالنے میں احتیاط سے کام نہیں لیا۔

حالیہ سماعت میں جج کا کہنا تھا کہ اس بات کا کوئی ثبوت نہیں ہے کہ اس بکرے کے مالک نے، جو ایک کامیڈین ہیں اور مختلف علاقوں کے دورے پر رہتے ہیں، اس بکرے کو اس کام پر لگایا ہو۔

جج کیرولین بارکل نے کہا کہ بکرے کے مالک جیمز ڈیزرنالڈز کا اس جانور پر کوئی اختیار نہیں تھا اور انہیں اس بات کا علم نہیں تھا کہ یہ بکرا گھاس کی بجائے پھول کھانا پسند کرتا ہے۔

جج کا کہنا تھا کہ یہ جرمانہ کبھی بھی عائد نہیں کیا جانا چاہیے تھا۔

بکرے کے مالک جیمز ڈیزرنالڈز نے مقدمے کے سماعت کے بعد کہا ’اس بکرے نے پولیس کو ایک اہم سبق سکھایا ہے کہ اتنا مت کاٹو جسے پھر چبا نہ سکو۔‘

گیری کو چونکہ عدالت نے کمرۂ عدالت میں طلب نہیں کیا گیا تھا اس لیے وہ عدالت کے باہر رپورٹرز میں گھرا فیصلے کا انتظار کرتا رہا۔

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔