کرفیو کے باوجود مصر میں مظاہرے جاری

آخری وقت اشاعت:  منگل 29 جنوری 2013 ,‭ 00:53 GMT 05:53 PST

محمد مرسی کی جانب سے قومی مذاکرات کی پیشکش کو اپوزیشن نے مسترد کردیا ہے

مصر میں ہزاروں افراد نے صدر محمد مرسی کی جانب سے نافذ کیے گئے رات کے کرفیو کی خلاف ورزی کرتے ہوئے مظاہرے کیے۔

کرفیو کے نفاذ اور عارضی ایمرجنسی کے باوجود ہزاروں افراد نے مصر کے شہر پورٹ سعید، اسماعیلیہ اور سویز میں مظاہرے کیے۔

دوسری جانب محمد مرسی کی جانب سے قومی مذاکرات کی پیشکش کو اپوزیشن نے مسترد کردیا ہے۔

نیشنل سیلویشن فرنٹ کے سربراہ محمد البرادی نے صدر کی مذاکرات کی دعوت کو مستعد کرتے ہوئے کہا کہ اس وقت تک مذاکرات نہیں ہوں گے جب تک کہ قومی اتحاد حکومت قائم نہیں کی جاتی اور متنازع آئین کی شقیں تبدیل نہیں کی جاتیں۔

ایک اندازے کے مطابق حالیہ مظاہروں میں پچاس سے ساٹھ افراد ہلاک ہو چکے ہیں۔

پورٹ سعید میں ایک عدالتی فیصلے کے خلاف شروع ہونے والے حالیہ ہنگاموں میں تینتیس افراد ہلاک ہو چکے ہیں جبکہ ملک کے دوسرے شہروں میں صدر محمد مرسی کی حکومت کے خلاف مظاہرے ہوئے۔

مظاہرین نے کرفیو کی خلاف ورزی کرتے ہوئے مارچ کیا اور پولیس سٹیشنز کو پر حملے کیے۔

تاہم سویز اور پورٹ سعید میں بکتر بند گاڑیوں اور ٹینکوں میں فوجی مداخلت نہیں کر رہے۔

سویز میں مظاہرین نے صوبائی حکومت کے ہیڈ کوارٹر کی جانب مارچ کیا۔

دوسری جانب قاہرہ میں، جہاں کرفیو نہیں لگایا گیا، پرتشدد کارروائیاں جاری رہیں اور تحریر سکوائر میں فائرنگ کے نتیجے میں ایک شخص ہلاک ہوا۔

مصر کے سرکاری ٹی وی چینل کے مطابق پیر کو کُل 590 افراد زخمی ہوئے اور زیادہ تر پورٹ سعید کے شہر میں زخمی ہوئے۔

مظاہروں کو روکنے کے لیے کابینہ نے ایک بل کا مسودہ منظور کیا جس کے تحت فوج کو لوگوں کو گرفتار کرنے کے بھی اختیارات دیے گئے۔ یہ بلپارلیمنٹ کے ایوانِ بالا نے بعد میں منظور کر لیا۔

انسانی حقوق کی بین الاقوامی تنظیم ایمنسٹی انٹرنیشنل نے مصر کی سکیورٹی فورسز کی جانب سے مظاہرین کے خلاف ضرورت سے زیادہ طاقت استعمال کرنے کی مذمت کی ہے۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔