اوباما کی فائرنگ کرتے ہوئے تصویر جاری

آخری وقت اشاعت:  اتوار 3 فروری 2013 ,‭ 01:07 GMT 06:07 PST

صدر اوباما کو نشانے بازی کا بڑا شوق ہے

وائٹ ہاؤس نے امریکی صدر براک اوباما کی تصویر جاری کی ہے جس میں وہ بندوق سے فائر کر رہے ہیں۔ بظاہر اس اقدام کا مقصد اس سوال کا جواب دینا ہے کہ آیا صدر نے کبھی زندگی میں بندوق چلائی ہے یا نہیں۔

صدر اوباما نے حال ہی میں دا نیو ری پبلک میگزین کو کہا تھا: ’ہم کیمپ ڈیوڈ میں ہر وقت ’سکِیٹ شوٹنگ‘ کرتے رہتے ہیں۔‘ واضح رہے کہ سکیٹ شوٹنگ میں مٹی کی رکابیاں ہوا میں چھوڑی جاتی ہیں جنھیں نشانہ بنایا جاتا ہے۔

اس تصویر پر چار اگست 2012 کی تاریخ درج ہے، اور اس میں صدر اوباما نے جینز پہنی ہوئی ہے، دھوپ کا چشمہ لگایا ہوا ہے اور ان کے کانوں پر حفاظتی ایرفون ہیں۔ وہ شاٹ گن سے فائر کر رہے ہیں جس کے دہانے سے دھواں نکلتا ہوا دکھائی دے رہا ہے۔

وہ پیر کے دن منی ایپلس شہر میں امریکہ میں اسلحے پر کنٹرول کی تجاویز پر بحث کریں گے۔

جب وائٹ ہاؤس سے پوچھا گیا کہ اس سے قبل صدر کی شوٹنگ کی عادت کے بارے میں کیوں کچھ نہیں بتایا گیا تو وائٹ ہاؤس کے پریس سیکریٹری جے کارنی نے کہا، ’اس لیے کہ صدر کیمپ ڈیوڈ اپنے خاندان اور بچوں کے ساتھ وقت گزارنے اور آرام و تفریح کے لیے جاتے ہیں، نہ کہ تصاویر کھنچوانے کے لیے۔‘

"میرا خیال ہے کہ یہ اگلے چند ماہ میں سب سے بڑا کام ہو گا۔ اس کا مطلب ہے کہ اسلحے پر کنٹرول کرنے کے حامیوں کو تھوڑا زیادہ سننے کی ضرورت ہے۔"

صدر اوباما

دا نیو ری پبلک کو دیے گئے انٹرویو میں صدر اوباما کا یہ بیان نقل کیا گیا ہے کہ وہ امریکہ کی شکاری روایات کا بڑا احترام کرتے ہیں۔ ساتھ ہی انھوں نے اسلحے کو کنٹرول کرنے کے حامیوں سے کہا کہ وہ اسلحے کے بارے میں بحث کے دوران اپنے مخالفین کے خیالات پر بھی توجہ دیں۔

’میرا خیال ہے کہ یہ اگلے چند ماہ میں سب سے بڑا کام ہو گا۔ اس کا مطلب ہے کہ اسلحے پر کنٹرول کرنے کے حامیوں کو تھوڑا زیادہ سننے کی ضرورت ہے۔‘

صدر اوباما نے گذشتہ ماہ اسلحے پر کنٹرول کے کئی اقدامات کیے تھے، جن میں خودکار رائفلوں پر پابندی اور اسلحے کے خریداروں کے پس منظر کی زیادہ وسیع تفتیش شامل ہے۔

اس اعلان سے ایک ماہ سے قبل 14 دسمبر کو ریاست کنیٹی کٹ کے ایک پرائمری سکول میں ایک شخص نے 20 بچوں سمیت 26 افراد کو گولی چلا کر مار ڈالا تھا۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔