سیکسی ایس ایم ایس بھیجنے پر برخاست

آخری وقت اشاعت:  جمعـء 22 فروری 2013 ,‭ 14:00 GMT 19:00 PST

ایف بی آئی نے ایک اہلکار کو اس بنا پر معطل کیا کہ وہ سرکاری موٹر سائیکل پر سیر کرنے نکل گیا

امریکی ادارے فیڈرل انویسٹیگیشن بیورو (ایف بی آئی) نے اپنے عملے کے کچھ افراد کو اپنے افسران بالا کے دفتر کی جاسوسی، مساج پارلر کا دورہ کرنے اور اپنے ساتھیوں کو ننگی تصاویر ٹیکسٹ کرنے کی پاداش میں کچھ کو برخاست اور کچھ کی سرزنش کی گئی ہے۔

ایف بی آئی کے عملے کے خلاف کارروائی کا انکشاف تمام عملے کو بھیجی گئی ایک ای میل کے منظرعام پر آنے سے ہوا ہے۔

اس ای میل میں غیر پیشہ وارنہ رویے ، ننگی تصاویر بھیجنے اور نشے کی حالت میں اسلحہ پاس رکھنے کے جرم میں ملازمت سے برخاست ہونے والے افراد کے بارے میں معلومات فراہم کی گئی ہیں۔

جو اہلکار اس کارروائی میں ملوث پائے گئے انہیں یا تو انہیں برطرف کر دیا گیا ہے یا پھر ان کی سرزنش کی گئی ہے۔

ایک واقعے میں ایف بی آئی کے ایک ملازم نے اپنے ذاتی موبائل فون سے اپنے ادارے کے کچھ افراد کو ننگی تصاویر بھیجی تھیں۔

اس رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ ان تصاویر کے بعد دفتر میں افواہوں کا ماحول پیدا ہوا جس سے ماحول خراب ہوا اور کئی سکواڈ کی کارکردگی بھی متاثر ہوئی۔

ایک اور واقعے میں ایک اہلکار نے دفتر کی جانب سے مہیا کیے جانے والے بلیک بیری فون سے فحش پیغامات بھیجے۔ ایک خاتون ایجنٹ نے اپنی ننگی تصویر اپنے سابق بوائے فرینڈ کی بیوی کو بھیجی۔

ایک اہلکار کو ایک پارلر کے دورے کے دوران ’جنسی مہربانی‘ کے عوض رقم ادا کرنے کے جرم میں چودہ دن کے لیے معطل کیا گیا۔

ایک اہلکار کو اس بنا پر معطل کیاگیا کہ وہ سرکاری موٹرسائیکل پر سیر کرنے نکل گیا۔ جبکہ ایک اہلکار کی اس بنا پر سرزنش کی گئی کہ اس نے نشے کی حالت میں اسلحہ پاس رکھا۔

ایک ایجنٹ اس بنا پر ملازمت سے برخاست کر دیا گیا کیونکہ اس نے اپنے اعلی افسر کےدفتر میں ایک ریکارڈنگ کا آلہ چھپا دیا اور اس کے علاوہ اپنے افسر کے دفتر میں دستاویزات کی چھان بین کی۔

ایف بی آئی نے ای میل کا دفاع کرتے ہوئے کہا ہر ایسی ای میل اس لیے بھیجی جاتی ہے تاکہ سٹاف کو پتا چلے کہ اس صورت میں یہ کچھ بھی ہو سکتا ہے۔ ایف بی آئی نے کہا کہ اگر سٹاف ممبر دفتری ضروریات کے تحت بلیک بیری دیا جاتا ہے تو اس کا ہر گز یہ مطلب نہیں ہے کہ اس فون پر ننگی تصاویر دوسروں کو ٹیکسٹ کرنا شروع کر دے۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔