برطانیہ: رومن کیتھولک پادری مستعفیٰ

آخری وقت اشاعت:  پير 25 فروری 2013 ,‭ 14:11 GMT 19:11 PST

پوپ بینیڈکٹ کے جانشین کے لیے ہونے والے انتخاب میں حصہ نہیں لوں گا: کارڈینل کیتھ اوبرائن

برطانیہ کے ایک رومن کیتھولک رہنما کارڈینل کیتھ اوبرائن تین عشرے پہلےمتعدد پادریوں کے ساتھ ’نامناسب رویہ‘ اپنانے کے الزامات سامنے آنے کے بعد مستعفیٰ ہوگئے ہیں۔

رومن کیتھولک فرقے کے پیشوا پوپ بینیڈکٹ نے کارڈینل کیتھ اوبرائن کا استعفیٰ منظور کر لیا ہے۔

برطانیہ میں سکاٹش رومن کیتھولک چرچ کے سربراہ کارڈینل اوبرائن نےایک بیان میں ان تمام افراد سے معافی مانگی ہے جن کی ان سے دل آزاری ہوئی ہے۔

کارڈینل کیتھ اوبرائن نے تصدیق کی ہے کہ وہ پوپ بینیڈکٹ کے جانشین کے لیے ہونے والے انتخابات میں حصہ نہیں لیں گے۔

کارڈینل کیتھ اوبرائن نےکہا کہ ان کا استعفیٰ منظور ہوگیا ہے اور پوپ آرچ ڈاوئسس کے لیے نیا ایڈمنسٹریٹر مقرر کریں گے۔

کارڈینل کیتھ اوبرائن نے کہا کہ انہیں کارڈینل بننے کے دواران سکاٹ لینڈ کے لوگوں کی ملک اور کے باہر ختم کرنے کا موقع ملا جس کے وہ بہت مشکور ہیں۔

برطانوی اخبار آوبزرور نے اپنی ایک رپورٹ میں الزام عائد کیا تھا اسی کی دہائی میں کارڈینل کیتھ اوبرائن نے رات کی عبادت کے بعد چار مختلف مواقعوں پر ’نامناسب رویہ‘ اپنایا تھا۔

سکاٹ لینڈ کے فرسٹ منسرٹ ایلکس سالمن نے کہا کہ یہ افوسناک امر ہے کہ کارڈینل کیتھ اوبرائن کا کیریئر اس انداز میں اختتام پذیر ہو رہا ہے ۔

انہوں نے کہا کہ انہیں نہیں پتہ کہ انکوائری کا کیا نتیجہ ہو گا لیکن انہوں نے کیتھ اوبرائن کو ہمیشہ ملک اور چرچ کے لیے ایک بہتر شخص پایا۔

سکاٹ لینڈ میں ہم جنس پرستوں کے حقوق کا گروپ سٹونوال سکاٹ لینڈ کے ڈائریکٹر کولن میکفرلن نے کارڈینل کیتھ اوبرائن سال کا سال دو ہزار بارہ کا سب ’ہٹ دھرم‘ شخص قرار دیا تھا۔

کولن میکفرلین نے کہا کہ انہیں امید ہے کہ کارڈینل کیتھ اوبرائن کی جگہ لینے والے نئے کارڈینل سکاٹ لینڈ کے ہم جنس پرستوں پر کچھ مہربانی کریں گے۔

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔