عراق میں شامی افواج کے اہلکار ہلاک

آخری وقت اشاعت:  منگل 5 مارچ 2013 ,‭ 19:15 GMT 00:15 PST
شامی فوج کا اہلکار (فائل فوٹو)

ہلاک ہونے والوں میں شام فوجی کے کئی اہلکار شامل ہیں (فائل فوٹو)

عراق کے دارالحکومت بغداد میں حکام کا کہنا ہے کہ عراق کے مغربی صوبے انبار میں فوجیوں سمیت شام کے چالیس کے قریب اہلکار ہلاک ہو گئے ہیں۔

خبر رساں ادارے رائٹرز کے مطابق یہ افراد حکومت مخالف باغیوں کے ایک حملے سے بچنے کی کوشش میں سرحد پار کر کے عراق میں داخل ہوئے تھے۔

ان لوگوں کو واپس سرحد کی طرف گاڑیوں میں لے جایا جا رہا تھا کہ ان پر نا معلوم مسلح افراد نے حملہ کر دیا۔ حملے میں مرنے والوں میں کئی عراقی بھی شامل ہیں۔

ان لوگوں پر حملہ سرحد پر یاروبیہ کے قریب اکاشات کے مقام پر کیا گیا۔ ان کو الولید کے سرحدی چوکی کے راستے واپس کیا جا رہا تھا۔

شام میں پچھلے تقریباً دو سال سے شورش جاری ہے اور حکومت اور صدر بشار الاسد کی حکومت کی مخالفت کرنے والوں کے درمیان اس جنگ میں ہزاروں افراد ہلاک ہوچکے ہیں۔

ایک عراقی اہلکار نے خبر رساں ادارے رائٹرز سے بات کرتے ہوئے بتایا کہ ’اس قافلے پر گھات لگا کر حملہ کیا گیا اور حملے میں چالیس افراد ہلاک ہوئے جن میں عراق کے فوجی بھی شامل ہیں۔‘

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔