ابو سیاف نے آسٹریلیوی یرغمالی کو رہا کر دیا

آخری وقت اشاعت:  ہفتہ 23 مارچ 2013 ,‭ 04:33 GMT 09:33 PST

روڑویل کو محفوظ مقام پر منتقل کر دیا گیا ہے

فلپائن میں القاعدہ سے منسلک ایک اسلامی گروپ نے پندرہ ماہ پہلے اغواء کیے جانے والے آسٹریلیوی شہری کو رہا کر دیا ہے۔

پولیس کے مطابق سنیچر کو ابو سیاف نامی گروپ نے وارن روڑویل کو جنوبی شہر پگاڈین میں رہا کیا ہے۔

انہیں سال دو ہزار گیارہ میں ابو سیاف گروپ کے شدت پسندوں نے اغواء کیا تھا اور ان کی ویڈیو دسمبر میں سماجی رابطوں کی ویب سائٹس پر جاری کی تھی۔

ابوسیاف امریکہ میں دہشت گرد تنظیموں کی فہرست میں شامل ہے۔ یہ جنوبی فلپائن میں سب سے چھوٹی شدت پسند تحریک ہے۔

آسٹریلیا کے وزیر خارجہ بوب کارر نے رہائی کی خبر پر خوشی کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ دونوں ملکوں کو مشترکہ کوششوں کے نتیجے میں رہائی عمل میں آئی۔

’فلپائن کی حکومت نے اس کیس میں مرکزی کردار ادا کیا اور وارن روڑویل کی جانب سے اپنی انتھک کوششوں کے اعتراف پر مبارکباد کی حقدار ہے۔‘

وارن روڑویل کو محفوظ مقام پر منتقل کر دیا گیا ہے اور اب ان کی بحالی پر کام جاری ہے۔

روڑویل اور ان کی اہلیہ فلپائن کے ساحلی شہر آئپل میں ایک دکان چلاتے تھے اور انہیں دسمبر سال دو ہزار گیارہ میں اغواء کیا گیا تھا۔

جنوبی فلپائن میں غیر ملکی شہریوں کو تاوان کے لیے اغواء کیا جاتا ہے۔ آسٹریلیا کی لمبے عرصے سے تاوان ادا نہ کرنے کی پالیسی ہے۔

اس علاقے میں باغیوں اور اسلامی شدت پسند گروپ کے ٹھکانے ہیں یہاں اقلیتی مسلمان خودمختاری کے لیے تحریک چلا رہے ہیں۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔