’شام کے اصل دوست ابھی بھی موجود ہیں‘

Image caption ’اگر سیدہ زینب کے روضے کو نقصان پہنچا تو ایسے حالات پیدا ہو جائیں گے جن پر قابو پانا مشکل ہو جائے گا‘

لبنان کے گروہ حزب اللہ کے سربراہ حسن نصراللہ کا کہنا ہے کہ شام کے اصل دوست موجود ہیں جو شام کو امریکہ، اسرائیل یا اسلامی شدت پسندوں کے ہاتھ نہیں چڑھنے دیں گے۔

حسن نصراللہ نے یہ بات حزب اللہ کے ٹی وی چینل المنار پر خطاب کرتے ہوئے کہی۔

انہوں نہ کہا کہ شام کے صدر بشار الاسد کی حکومت کے مخالفین حکومت کو عسکری زور پر نہیں گراسکتے۔

فرانسیسی خبر رساں ایجنسی اے ایف پی کے مطابق حسن نصراللہ نے کہا ’بڑی تعداد میں باغی لبنانی باشندوں کے گاؤں پر قبضہ کرنے کی تیاری کر رہے ہیں۔ اس لیے یہ ضروری ہے کہ شام کی فوج کی ہر ممکن مدد کی جائے۔‘

حزب اللہ کے سربراہ نے کہا کہ ان کی تنظیم نے کبھی بھی اپنے ’شہداء‘ کو نہیں چھپانے کی کوشش نہیں کی لیکن یہ رپورٹیں کہ حزب اللہ کے بڑی تعداد میں کارکن شام میں ہلاک ہویے ہیں بے بنیاد ہیں۔

حسن نصراللہ نے تنبیہہ کی کہ اگر دمشق کے جنوب میں واقع سیدہ زینب کے روضے کو نقصان پہنچا تو ایسے حالات پیدا ہو جائیں گے جن پر قابو پانا مشکل ہو جائے گا۔

حسن نصراللہ کا یہ بیان ایسے وقت میں آیا ہے جب ایک روز قبل ہی شامی وزیر اعظم ایک دھماکے میں بال بال بچے اور دمشق میں ایک اور دھماکے میں چودہ افراد ہلاک ہوئے۔

اسی بارے میں