’معلوم نہیں کیمیائی ہتھیار کون استعمال کر رہا ہے‘

Image caption شام میں کیمیائی ہتھیار کے استعمال کے حوالے سے جلد بازی سے کام نہیں لیں گے: اوباما

امریکی صدر براک اوباما کا کہنا ہے کہ امریکہ کو ابھی یہ معلوم نہیں ہے کہ شام میں کیمیائی ہتھیار کون استعمال کر رہا ہے۔

یہ بات انہوں نے واشنگٹن میں ایک پریس کانفرنس کے دوران کہی۔

انہوں نے کہا کہ شام میں کیمیائی ہتھیار کے استعمال کے حوالے سے جلد بازی سے کام نہیں لیں گے۔

ان کا کہنا تھا کہ انہوں نے وزارت دفاع سے کہا ہے کہ پینٹاگان سے کئی آپشنز مانگی ہے بشمول فوجی کارروائی کے اگر یہ ثابت ہو جاتا ہے کہ شام کے صدر بشار الاسد نے شہریوں اور باغیوں کے خلاف کیمیائی ہتھیاروں کا استعمال کیا ہے۔

دوسری جانب شام کے اقوام متحدہ میں سفیر بشار جعفری نے کہا ہے کہ شام کی حکومت کبھی بھی اپنے ہی لوگوں پر کیمیائی ہتھیار استعمال نہیں کرے گی۔

واضح رہے کہ امریکہ اور برطانیہ دونوں نے شامی حکومت کی طرف سے نرو گیس سارین جیسے ہتھیاروں کے استعمال کے سامنے آنے والے ثبوتوں کی نشاندہی کی ہے۔

خیال ہے کہ برطانیہ نے شام سے نمونے حاصل کیے ہیں جنھیں ایک دفاعی تجربہ گاہ میں ٹیسٹ کیا گیا ہے۔ وزارتِ خارجہ کے ایک ترجمان نے کہا، ’شام سے حاصل کردہ مواد میں سارن پائی گئی ہے۔‘

اندازہ ہے کہ شام کے پاس کیمیائی ہتھیاروں کے وسیع ذخائر موجود ہیں، اور حالیہ مہینوں میں بین الاقوامی برادری میں اس ذخیرے کے تحفظ کے بارے میں تشویش بڑھ گئی ہے۔

اسی بارے میں