فلپائن:باغیوں کا حملہ،7 کمانڈوز ہلاک

این پی اے فائل فوٹو
Image caption این پی اے فلپائن میں ایک کمیونسٹ ریاست کے قیام کے لیے گذشتہ چار دہائیوں سے لڑ رہی ہے

فلپائن میں حکام کے مطابق کمیونسٹ باغیوں کے حملے میں سات پولیس کمانڈوز ہلاک جبکہ سات زخمی ہو گئے ہیں۔

یہ واقعہ ملک کے شمال میں منیلا سے تقربیاً چار سو کلو میٹر دور آلاکوپن کے قریب اس وقت پیش آیا جب پولیس کمانڈوز طبی معائنے کے لیے جا رہے تھے۔

پولیس حکام کے مطابق باغیوں نے پہلے پولیس ٹرک کو دھماکا خیز مواد سے ہدف بنایا اور پھر گولیوں کی بوچھاڑ کر دی۔ ہلاک ہونے والے تمام کمانڈوز کا تعلق پولیس کے انسدادِ دہشت گردی یونٹ سے تھا۔

حکام کے مطابق نیو پیپلز آرمی (این پی اے) نامی باغیوں کے گروپ نے پولیس کمانڈوز کو نشانہ بنایا۔ خیال رہے کہ این پی اے فلپائن میں ایک کمیونسٹ ریاست کے قیام کے لیے گذشتہ چار دہائیوں سے لڑ رہی ہے۔

این پی اے زیادہ تر دیہاتی علاقوں میں سرگرم ہے اور فوج کے ساتھ چھوٹی سطح پر لڑائیاں لڑتی ہیں۔ یہ گروپ امریکہ کے محکمۂ خارجہ کے دہشت گرد تنظیموں کی فہرست میں شامل ہے۔

واضح رہے کہ گذشتہ سال ملک میں قیامِ امن کے لیے مذاکرات کا سلسلہ ناکام ہو گیا تھا۔

فلپائن کے جنوب میں بھی حکومت اور باغیوں کے درمیان کشیدگی کا سلسلہ جاری ہے۔

فلپائن کی فوج کے مطابق گذشتہ ہفتے بھی ملک کے جنوب میں شدت پسند تنظیم ابو سیاف کے ساتھ جھڑپوں میں سات فوجی اور چار عسکریت پسند ہلاک ہو گئے تھے۔

ابو سیاف کو جنوبی فلپائن میں چھوٹی لیکن سب سے زیادہ باغی اسلامی شدت پسند تنظیم تصور کیا جاتا ہے جو اغوا کے کئی واقعات میں ملوث رہی ہے۔

یہ گروپ ان غریب علاقوں میں سرگرم ہے جہاں مسلمان اقلیت خودمختاری کے لیے کئی دہائیوں سے جدوجہد کر رہے ہیں۔

مسلمانوں کی بڑی علیحدگی پسند تنظیم مورو اسلامک لبریشن فرنٹ نے گذشتہ سال حکومت کے ساتھ زیادہ خودمختاری کے عوض امن معاہدہ کیا تھا۔

ابو سیاف ان باغی گروپوں میں سے تھا جس نے حکومت کے ساتھ امن معاہدے پر دستخط نہیں کیے۔ واضح رہے کہ امریکہ ابوسیاف گروہ کو دہشت گرد گروپ مانتا ہے اور اس کا کہنا ہے کہ اس کا دہشت گرد تنظیم القاعدہ سے تعلق ہے۔

اسی بارے میں