چین میں آتشزدگی سے ایک سو انیس افراد ہلاک

Image caption سو کے قریب کارکن آگ کی جگہ سے بچ نکلنے میں کامیاب ہوئے ہیں

چین کے سرکاری میڈیا کے مطابق ملک کے صوبہ جیلین میں مرغیوں کے ایک مذبح خانے میں آگ لگنے سے ایک سو انیس افراد ہلاک اور متعدد زخمی ہو گئے ہیں۔

ملک کے سرکاری خبر رساں ایجنسی زنہوا کے مطابق صوبہ جیلین کے دیہیو علاقے میں مرغیوں کے ایک مذبح خانے میں پیر کو آگ لگی جس سے بڑے پیمانے پر جانی نقصان ہوا۔

خبر رساں ادارے نے مقامی ذرائع کے حوالے سے بتایا ہے کہ امدادی کارکن جائے وقوعہ پر موجود ہیں اور آگ پر ابھی تک قابو نہیں پایا جا سکا ہے۔

اطلاعات کے مطابق بجلی کے نظام میں تین دھماکوں کے بعد آگ بھڑک اٹھی۔

سو کے قریب کارکن آگ کی جگہ سے بچ نکلنے میں کامیاب ہوئے ہیں۔

زنہوا کے مطابق زخمیوں کو ہسپتال منتقل کیا گیا ہے تاہم ان کے زخموں کی نوعیت کا معلوم نہیں ہے۔

سرکاری ٹی وی سی سی ٹی وی کو مذبح خانے کے کارکنوں نے بتایا کہ شفٹ کی تبدیلی کے وقت آگ لگی۔

خبر رساں ادارے زنہوا کے مطابق ’عمارت کی پیچیدہ ساخت اور باہر جانے کے لیے تنگ راستوں کی وجہ سے امدادی کارروائیوں میں مشکلات کا سامنا ہے۔‘

عمارت کے اندر پھنسے ہوئے لوگوں کی تعداد کا اندازہ نہیں ہو سکا ہے جبکہ آگ لگنے کی وجہ معلوم ہونے کے لیے تحقیقات ہو رہی ہیں۔

زنہوا کی رپورٹ کے مطابق مرغیوں کے اس پلانٹ میں ایک ہزار سے زائد افراد کام کرتے ہیں۔

چین کی ویب سائٹس پر تصاویر میں جائے وقوعہ سے دھواں نکلتے دکھائی دیتا ہے اور وہاں آگ بجھانے والے ٹرک بھی نظر آتے ہیں۔

شنگھائی میں بی بی سی کے نامہ نگار کا کہنا ہے کہ چین میں کام کی جگہ پر حفاظتی اقدامات اکثر معیار کے مطابق نہیں ہوتے جہاں سے اکثر کارخانوں اور کانوں میں حادثات کی اطلاعات ملتی ہیں۔

اسی بارے میں