پندرہ منزلوں سے گر کر بچ گیا

Image caption سٹل ویل اس عمارت کی 15ویں منزل سے گرے تھے

نیوزی لینڈ کے مقامی میڈیا نے بتایا ہے کہ ایک برطانوی شخص عمارت کی پندرہویں منزل سے گرنے کے باوجود بچ گیا ہے۔

ان کے دوستوں نے بتایا کہ ان کی کچھ ہڈیاں ٹوٹی ہیں اور کچھ اندرونی چوٹیں بھی آئی ہیں، لیکن وہ ’ٹھیک ٹھاک‘ ہیں اور ’بہت خوش نصیب انسان‘ ہیں۔

برطانوی شخص سٹل ویل کے دوستوں نے نیوزی لینڈ کے خبررساں ادارے فیئر فیکس میڈیا کو بتایا کہ پیر کو وہ جاگ رہے تھے اور ہنس رہے تھے، البتہ انہیں بالکل یاد نہیں کہ ان کے ساتھ کیا واقعہ پیش آیا تھا۔

ویل کے ساتھ فلیٹ میں رہنے والی خاتون بیتھ گوڈوِن نے کہا: ’اسے زیادہ اندرونی چوٹیں آئی ہیں۔ اس کے پسلیوں اور گردن کی کچھ ہڈیاں ٹوٹی ہیں لیکن وہ اہم ہڈیاں نہیں ہیں۔‘

نیوزی لینڈ کی پولیس نے کہا ’ایسا لگتا ہے کہ یہ شخص چودھویں منزل پر اپنے فلیٹ کی چابی اندر بھول آیا تھا۔ جب اس نے پندرہویں منزل سے اپنے فلیٹ کی بالکونی میں اترنے کی کوشش کی تو نیچے گر گیا۔‘

پولیس نے اضافہ کیا کہ اس واقعے میں کوئی مشتبہ چیز نظر نہیں آئی۔

سٹل ویل نامی یہ 20 سالہ برطانوی شخص نیوزی لینڈ میں چھٹیاں منانے کے ساتھ ساتھ کام کی غرض سے گئے ہوئے ہیں۔

ویل کے دوستوں نے کہا کہ اتوار کو جب ویل کو معلوم چلا کہ وہ اپنے فلیٹ کی چابی اندر ہی بھول آئے ہیں تو وہ پندرہویں والی منزل پر اپنے فلیٹ کے اوپر رہنے والی خاتون جیرالڈین سے درخواست کی کہ وہ ان کے فلیٹ کی بالکونی سے اپنے فلیٹ کی بالکونی میں اترنا چاہتے ہیں۔

جیرالڈین نے نیوزی لینڈ ہیرلڈ اخبار کو بتایا کہ سٹل ویل تھوڑا سا نشے میں تھا، لیکن اس نے شائستگی سے بات کی۔

’میرا خیال تھا کہ وہ ایسا نہیں کرے گا۔ میں نے سوچا، ٹھیک ہے، میں اسے دیکھنے دوں گی کہ یہ کام بالکل ناممکن ہے۔ میرا نہیں خیال تھا کہ وہ چھلانگ لگا دے گا۔‘

’میرا خیال تھا کہ میں خواب دیکھ رہی ہوں۔ سب کچھ سیکنڈوں کے اندر اندر ہو گیا۔ اس سے پہلے کہ میں اسے روک پاتی، وہ فوراً بالکونی پر چڑھ گیا۔ میں مدد کے لیے چیخ بھی نہیں پائی۔‘

سٹل ویل تیرہ منزلیں نیچے ایک اور عمارت کی چھت پر گرے۔ انھیں ہسپتال لے جایا گیا۔ ہسپتال کے نمائندے نے کہا کہ ان کی حالت اطمینان بخش ہے۔

اسی بارے میں