افغانستان: اعلیٰ خاتون پولیس افیسر ہلاک

Image caption افغانستان میں صوبہ ہلمند امن و امان کی صورتحال سب سے زیادہ خراب ہے

افغانستان کے صوبہ ہلمند میں ایک اعلیٰ خاتون پولیس اہلکار کو فائرنگ کر کے ہلاک کر دیا گیا ہے۔

پولیس کے ترجمان کے مطابق لیفٹینٹ اسلام بی بی لشکرہ گاہ میں اپنے داماد کے ساتھ موٹر سائیکل پر جا رہی تھیں کہ نامعلوم مسلح افراد نے ان پر فائرنگ کر دی۔

حکام کے مطابق فائرنگ سے اسلام بی بی شدید زخمی ہو گئیں اور بعد میں ہسپتال میں ان کی موت واقع ہو گی۔

اسلام بی بی بتیس خاتون پولیس افسران کی کمانڈر تھیں اور انہیں پولیس میں ملازمت کرنے پر خاندان کی جانب سے تنقید کا سامنا تھا اور اپنے ہی بھائیوں نے دھمکی دی تھی۔

قدامت پسند صوبہ ہلمند میں اسلام بی بی خواتین کے لیے ایک مثال سمجھی جاتی تھیں۔

دریں اثناء ہلمند میں سڑک کنارے نصب بم کے پھٹنے سے چار لڑکیاں ہلاک ہو گئی ہیں۔ ہلاک ہونے والی لڑکیوں کی عمر سات سے بارہ سال کے درمیان تھی اور وہ دریا سے پانی لینے جا رہی تھیں۔

نامہ نگاروں کا کہنا ہے کہ افغانستان کے جنوبی علاقوں میں گزشتہ کچھ عرصے سے عام شہریوں کی ہلاکت میں اضافہ ہوا ہے۔ زیادہ تر ہلاکتیں شدت پسندوں کی جانب سے سڑک کے کنارے نصب دیسی ساختہ بم دھماکوں کے نتیجے میں ہوئیں ہیں۔

اسی بارے میں