’پاناما نے شمالی کوریا کا جہاز روک لیا‘

Image caption صدر ریکارڈو کا کہنا ہے کہ جہاز کیوبا سے پاناما کینال کی جانب جا رہا تھا

پاناما کے صدر کا کہنا ہے کہ شمالی کوریا کے ایک جہاز کو روکا گیا ہے جس میں غیر اعلانیہ فوجی ساز و سامان تھا۔

صدر ریکارڈو مارٹنیلی نے مقامی ذرائع ابلاغ کو بتایا کہ شمالی کوریا کا بہری جہاز کیوبا سے آ رہا تھا۔ انہوں نے کہا کہ اس جہاز میں مشتبہ ’جدید میزائل کے پرزے‘ تھے۔

پاناما کے صدر نے اپنے ٹوئٹر اکاؤنٹ پر ایک تصویر شائع کی ہے جس میں ساز و سامان میں سبز رنگ کی ایک شے پڑی ہوئی ہے۔

صدر ریکارڈو کا کہنا ہے کہ جہاز کیوبا سے پاناما کینال کی جانب جا رہا تھا اور اس کو مزید پوچھ گچھ کے لیے روکا گیا ہے۔

صدر ریکارڈو نے تفصیلات بتراتے ہوئے کہا کہ جہاز کو منشیات کے حوالے سے تلاشی کے لیے روکا گیا تھا اور تلاشی کے دوران براؤن چینی میں سے مشتبہ پرزے برآمد ہوئے۔

’ہم جہاز میں سے چیزیں اتاریں گے اور معلوم کرنے کی کوشش کریں گے کہ اس ساز و سامان میں کیا تھا۔‘

پاناما کے صدر کے مطابق اس جہاز کے عملے کو حراست میں لے لیا گیا ہے بشمول کپتان کے جس نے اپنے آپ کو مارنے کی کوشش بھی کی۔

پاناما کے سینیئر وزیر کا کہنا ہے کہ سکیورٹی حکام کو اس وقت شک پڑا جب جہاز کے کپتان اور عملے نے پرتشدد ردِعمل دکھایا۔

واضح رہے کہ اقوام متحدہ کی جانب سے شمالی کوریا پر ہتھیاروں کی درآمد اور برآمد پر پابندیاں عائد ہیں۔

ان پابندیوں کو اس وقت مزید سخت کردیا گیا جب شمالی کوریا نے تیسرا ایٹمی تجربہ کیا۔ ان پابندیوں میں ممالک کو اس بات کا حق دیا گیا ہے کہ وہ شمالی کوریا کے جہازوں کو روک کر تلاشی لے سکتے ہیں۔

حالیہ برسوں میں شمالی کوریا کے کئی جہازوں کو روک کر تلاشی لی گئی ہے۔

اسی بارے میں