سنوڈن: روس میں پناہ کی درخواست

ایڈورڈ سنوڈن
Image caption سنوڈن نے درخواست میں کہا ہے کہ امریکہ واپسی کی صورت میں انہیں تشدد اور سزائے موت دیے جانے کا خطرہ ہے۔

امریکہ کو مطلوب خفیہ ادارے سی آئی اے کے سابق اہلکار ایڈورڈ سنوڈن نے اطلاعات کےمطابق روس میں عارضی سیاسی پناہ کی درخواست دے دی ہے۔

روس میں حکام نے بتایا ہے کہ سنوڈن نے جو گزشتہ تین ہفتوں سے ماسکو کے شیریمتییوو ہوائی اڈے کی حدود میں قیام پذیر ہیں ضروری کاغذی کارروائی مکمل کر لی ہے۔

ایڈورڈ سنوڈن امریکہ میں حکومت کی طرف سے لوگوں کی نگرانی کرنے کے ایک خفیہ پروگرام کی تفصیلات منظر عام پر لانے کے الزام میں قانون نافذ کرنے والے اداروں کو مطلوب ہیں۔

سفری دستاویزات نہ ہونے کی وجہ سے سنوڈن لاطینی امریکہ کے ممالک کی طرف سے وہاں پناہ لینے کی پیشکش قبول نہیں کر سکے۔

سنوڈن نے روس میں پناہ لینے کی درخواست حکومت سے قریبی تعلق رکھنے ایک وکیل ایناتولی کچرینا کی مدد سے مکمل کی۔ کچرینانے بتایا کہ سنوڈن نے درخواست میں کہا ہے کہ امریکہ واپسی کی صورت میں انہیں تشدد اور سزائے موت دیے جانے کا خطرہ ہے۔

روس کے صدر ولادیمیر پوتن امریکی حکام کی طرف سے سنوڈن کی حوالگی کی درخواست مسترد کر چکے ہیں۔ تاہم انہوں نے کہا تھا کہ سنوڈن کو روس میں رکنے کی اجازت کے لیے امریکہ کے نگرانی کے پروگرام کی تفصیلات بتانے کا سلسلہ بند کرنا ہو گا۔