’اقوام متحدہ بحری جہاز کا معائنہ کرے‘

Image caption شمالی کوریا کے جہاز میں چینی کے ساتھ دفاعی سازوسامان کے چار کنٹینر ملے ہیں

پاناما کی حکومت نے اقوام متحدہ کے ماہرین سے کہا ہے کہ وہ شمالی کوریا کے جہاز سے ملنے والے کیوبا کے اسلحے کا معائنہ کریں۔

حکام کا کہنا ہے کہ جہاز کے عملے پر پاناما کی داخلی سکیورٹی کے خلاف جرم کا مقدمہ درج کیا گیا ہے۔

گزشتہ ہفتے پاناما میں روکے جانے والے شمالی کوریائی جہاز میں چینی کے ساتھ خفیہ طور پر غیر اعلان شدہ فوجی سازوسامان ملا تھا۔

اقوام متحدہ کی جانب سے شمالی کوریا کے متنازع جوہری پروگرام کی وجہ سے ہتھیاروں کی درآمد اور برآمد پر پابندیاں عائد کی گئی ہے۔

کیوبا نے جہاز میں دفاعی سازو سامان کی موجودگی کی تصدیق کرتے ہوئے کہا ہے کہ سویت یونین کے دور کے فرسودہ اسلحہ مرمت کے لیے شمالی کوریا بھیجا جا رہا تھا۔

پاناما کے حکام نے جہاز کو اُس وقت روکا جب جہاز کا عملے نے رابطہ کرنے پر جواب نہیں دیا۔ جس پر حکام کو جہاز میں غیر قانونی اشیا کی موجودگی کا شبہ ہوا۔بدھ کو پاناما کے وزیر داخلہ نے بتایا کہ جہاز سے اسلحے کے مزید دو کنٹینر ملے ہیں۔

انھوں نے بتایا کہ حکومت نے اقوام متحدہ سے پاناما کے راستے اسلحے کی غیر قانونی نقل وحمل کے خلاف مقدمہ چلانے کے لیے تجویز لی ہے۔

وزیر داخلہ نے کہا کہ توقع ہے کہ پانا جہاز اور اس میں موجود سامان اقوام متحدہ کے حوالے کر دے گا۔

اس سے پہلے کیوبا کے وزارتِ خارجہ نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ جہاز میں 240 ٹن فرسودہ دفاعی سامان موجود ہے جس میں دو اینٹی میزائل کمپلیکس، نو میزائلوں کے پُرزے اور لڑاکا جہازوں کے پرزے شامل ہیں۔

کیوبا کی حکومت کی جانب سے جاری ہونے والے بیان میں کہا گیا ہے کہ دفاعی سازوسامان بہت پرانا ہے جو مرمت کے بعد کیوبا کو واپس کیا جائے گا۔

کیوبا نے بین الااقوامی قوانین کا احترام اور امن کے قیام کے لیے جوہری عدم پھیلاؤ سمیت تخفیفِ اسلحہ کے لیے اپنا کردار ادا کرنے کی یقین دہانی بھی کروائی ہے۔

پاناما کے صدر ریکارڈو مارٹنیلی نے اپنے ٹوئٹر اکاؤنٹ پر ایک تصویر شائع کی ہے جس میں ساز و سامان میں سبز رنگ کی ایک شے پڑی ہوئی ہے۔

صدر ریکارڈو کا کہنا ہے کہ جہاز کیوبا سے پاناما کینال کی جانب جا رہا تھا اور اس کو مزید پوچھ گچھ کے لیے روکا گیا تھا۔

صدر نے کہا کہ پرانا دفاعی سازوسامان بھی بغیر بتائے پاناما کی حدود سے لے کر جانا غیر قانونی ہے۔

اسی بارے میں