دنیا کی سب سے بوڑھی خاتون جنوبی افریقہ میں

مازیبوکو
Image caption مازیبوکو اپنے سات بچوں میں سے اپنے 77 سالہ بیٹے کے ساتھ رہتی ہیں

اطلاعات کے مطابق جنوبی افریقہ کے شہر جوہانسبرگ کے جنوب مغرب میں واقع ایک چھوٹے سے شہر میں رہنے والی 119 سالہ جوہینا مازیبوکو دنیا کی سب سے عمر رسیدہ فرد ہیں۔

ان کے شناختی دستاویزات کے مطابق مازیبوکو کی پیدائش سنہ 1894 میں ہوئی تھی اور ان کے سات بچوں میں سے پانچ کی موت ہو چکی ہے۔

جنوبی افریقہ کے اخبار سویٹان کے مطابق ان کا کہنا تھا کہ ’خدا نے مجھے لمبی زندگی دی اور لیکن اب میں بہت بوڑھی ہو چکی ہوں۔‘

ایک دلچسپ بات یہ ہے کہ گینیز بک آف ورلڈ ریکارڈ کے مطابق دنیا میں سب سے زیادہ عمر رسیدہ شخص جاپان کے میساؤ اکاوا ہیں جن کی عمر 115 سال ہے۔

اخبار کے مطابق مازیبوکو اپنے 77 سالہ بیٹے ٹسیکو مازیبوکو کے ساتھ جوہانسبرگ سے 160 کلومیٹر دور کلرک سڈراپ میں رہتی ہیں۔

اخبار سویٹن کے مطابق مازیبوکو کو اس بات پر فخر ہے کہ وہ اس عمر میں بھی روزانہ اپنا بستر خود لگاتی ہیں۔

ان کا شناختی کارڈ سنہ 1986 میں جاری کیا گیا تھا جس پر ان کی تاریخ پیدائش 11 مئی 1894 درج ہے۔

جنوبی افریقہ کی وزارت داخلہ نے ان کے شناختی کاغذات کے درست ہونے کی تصدیق نہیں کی ہے لیکن خبر رساں ادارے اے ایف پی کا کہنا ہے کہ ان کے پاس اس کی نقل موجود ہے۔

دس بھائی بہنوں میں سب سے بڑی جوہینا مازیبوکو آج بھی اپنا کھانا خود پکاتی ہیں، اپنے کپڑے خود دھوتی ہیں اور ٹی وی دیکھتی ہیں۔

ان کے بیٹے نے اخبار کو بتایا کہ ’وہ خود سے چل پھر لیتی ہیں لیکن زیادہ دیر تک کھڑی نہیں رہ سکتیں کیونکہ انہیں چکر آنے لگتے ہیں۔‘

مازیبوکو برطانوی نوآبادیاتی دور میں زندگی بسر کر چکی ہیں۔ اس کے علاوہ انہوں نے نسلی امتیاز کا دور دیکھا ہے اور پھر نیلسن منڈیلا کی قیادت میں جمہوری دور بھی۔

تاریخ میں سب سے زیادہ عرصے تک زندہ رہنے والی فرانس کی ژانی کیلمنٹ تھیں جنہوں نے 4 اگست 1997 میں 122 سال کی عمر میں وفات پائی۔

اسی بارے میں