’سکول میں ٹیچر نے جنسی تعلق قائم کیا‘

Image caption ایلا نے بیس سال کی عمر میں پولیس سے رابط کیا اور ان کے ٹیچر کو بارہ سال قید کی سزا ہوئی

ایک برطانوی خاتون کے مطابق سکول میں ان کے ٹیچر نے انہیں اپنے ساتھ جنسی تعلق قائم کرنے پر مائل کیا۔

ایلا نے بی بی سی کے ریڈیو فور کے ایک دستاویزی پروگرام میں دیے گئے انٹرویو میں ان واقعات کے بارے میں بتایا۔

ایلا نے سکول کے دنوں کو یاد کرتے ہوئے بتایا کہ کس طرح سے موسیقی کے ایک استاد نے ان کو اپنی جانب مائل کیا اور انہیں اپنے ساتھ جنسی تعلق قائم کرنے پر مجبور کیا۔

ایلا نے سکول میں جنسی ہراس کا یہ واقعہ اس وقت بیان کیا ہے جب رواں سال جون میں تیس سالہ جیرمی فورسٹ کو ایک پندرہ سالہ طالبہ کو اغوا کرنے اور ان کے ساتھ جنسی زیادتی کے الزام میں مجرم ٹھہرایا گیا تھا۔

ایلا کے مطابق فورسٹ کا کیس منظرعام آنے پر ان کی تکلیف دہ یادیں تازہ ہو گئیں۔

ایلا کے مطابق جب انھوں نے چودہ سال کی عمر میں ’جی سی ایس ای‘ میں موسیقی کا مضمون لیا تو اس وقت ان کے موسیقی کے استاد نے ان میں دلچسپی لینا شروع کی اور ان کے استاد نے انہیں مائل کیا وہ سکول میں زیادہ دیر تک رکیں تاکہ امتحانات میں ان کا اچھا گریڈ آ سکے۔

’میں کلاس روم میں تھی کہ اور وہ میرے پر جھک گئے اور بوسے لینا شروع کر دیے‘۔

میں کھلے عام یہ تسلیم کرتی ہوں کہ وہ مجھے پسند تھے اور ہم ایک دوسرے سے محبت کرتے تھے۔‘

ایلا کے مطابق یہ تعلق تیزی سے قائم ہوا اور کئی باتوں پر وہ غیر یقینی کا شکار تھیں۔

’میں یہ چاہتی تھی کہ ہم یہ تعلق قائم رکھیں، میری یہ شدید خواہش تھی کہ ہمارے درمیان ایک معصوم سا تعلق ہو جیسا کہ ایک صوفے پر لیٹ کر موسیقی سننا‘۔

اس ماحول میں ان کی پرورش ہوئی اور سولہویں سالگرہ کے بعد ان کے ساتھ جنسی زیادتی کی گئی۔

Image caption جیرمی فورسٹ پندرہ سال طالبہ سے جنسی تعلق قائم کرنے پر قصوروار ٹھہرائے گئے

کسی بھی بالغ کے لیے یہ غیرقانونی ہے کہ وہ استاد جیسی کسی اعتماد کی کسی پوزیشن سے اور اٹھارہ سال سے کم عمر کے فرد سے جنسی تعلق قائم کریں۔

1991 سے 2008 کے درمیان ٹیچرز اور طالب علموں کے درمیان جنسی تعلق کے 129 واقعات کے بارے میں قانونی چارہ جوئی ہوئی ہے۔

اساتذہ کی نیشنل یونین کے مطابق انہیں پولیس کی تحقیقات کی دو سو درخواستیں موصول ہوئیں اور تقریباً پانچ پر قانونی عدالتی کارروائی ہو سکی اور یہ سب جنسی جرائم یا اعتماد کے ٹھیس پہنچانے کے واقعات نہیں تھے۔

ایلا نے بیس سال کی عمر پر پہنچنے کے بعد اس واقعے کے بارے میں پولیس کو آگاہ کیا اور ایک طویل تحقیقات میں ایک اور متاثرہ سامنے آئیں اور بعد میں ایلا کے ٹیچر مجرم قرار پائے اور انہیں بارہ سال جیل کی سزا دی گئی۔

اسی بارے میں