عراق: سمارا میں کاربم حملہ 16 ہلاک

Image caption دھماکہ اس وقت ہوا جب لوگ سبزیوں اور پھلوں کی خریداری میں مصروف تھے

عراق میں حکام کا کہنا ہے کہ عراقی شہر سمارا میں ایک کار بم حملے کے نتیجے میں سولہ افراد ہلاک ہو گئے ہیں۔

شہر کی معروف مریادی سبزی منڈی میں ہونے والے حملے کے نتیجے میں چھبیس افراد زخمی ہو گئے۔

عراق تشدد کی لہر، پچاس افراد ہلاک

دھماکہ اس وقت ہوا جب لوگ سبزیوں اور پھلوں کی خریداری میں مصروف تھے۔

عراق میں ان دنوں فرقہ وارانہ تشدد کے واقعات میں اضافہ دیکھا گیا ہے اور بدھ کو بغداد کے شیعہ اکثریتی علاقوں میں سلسلہ وار بم دھماکوں میں اسی سے زیادہ افراد ہلاک ہو گئے تھے۔

سمارا میں کار بم دھماکہ ایسے وقت میں ہوا جب دکاندار بچ جانے والی سبزیوں اور پھلوں کو رعایتی نرخوں پر فروخت کرتے ہیں۔

حکام کے مطابق ہلاک ہونے والوں میں تین خواتین اور دو بچے بھی شامل تھے۔

یہ سبزی منڈی سمارا شہر کے مشرقی علاقے میں جعبریہ کے ضلعے میں واقع ہے۔

خبر رساں ادارے اے پی کے مطابق ایک اور کار بم دھماکہ جمعرات کو بغداد کے مضافات میں واقع ابو غریب کے علاقے میں ہوا جس کے نتیجے میں پانچ افراد ہلاک ہو گئے۔

Image caption اس سال صرف جولائی کے مہینے میں ایک ہزار سے زیادہ افراد مختلف تشدد کے واقعات میں ہلاک ہوئے

عراق میں تشدد کے واقعات میں اضافہ سنی شدت پسندوں کی جانب سے کارروائیوں کے نتیجے میں دیکپنے میں آیا ہے جو اس سے پہلے پانچ سال میں نہیں دیکھا گیا۔

رائٹرز نے اقوام متحدہ کے اعدادوشمار کے حوالے سے بتایا ہے کہ اس سال صرف جولائی کے مہینے میں ایک ہزار سے زیادہ افراد مختلف تشدد کے واقعات میں ہلاک ہوئے جو کہ 2008 کہ بعد سے کسی بھی مہینے میں ہلاکتوں کی سب سے زیادہ تعداد ہے۔

اسی بارے میں