امریکہ کی عالمی ساکھ متاثر ہو سکتی ہے: کیری

امریکی وزیر خارجہ جان کیری نے کہا ہے کہ امریکہ میں موجودہ تعطل اگر طول پکڑتا ہے تو یہ عالمی سطح پر امریکہ کی ساکھ کے لیے نقصان دہ ثابت ہو سکتا ہے۔

امریکی وزیرِ خارجہ جان کیری نے سنیچر کو انڈونیشیا میں اے پیک اجلاس شروع ہونے سے قبل کہا کہ ایشیا اور بحرالکاہل کے ممالک کی اقتصادی تعاون کی تنظیم ’اے پیک‘ کے اجلاس میں باراک اوباما کی عدمِ شرکت کے باوجود ایشیا ہمارے لیے اہم ہے۔

انھوں نے کہا کہ واشنگٹن میں جاری شٹ ڈاؤن کے باوجود ہم ایشیا میں اپنے اتحادیوں کے ساتھ کیے گئے وعدوں پر قائم ہیں۔

شٹ ڈاؤن کی وجہ سے اوباما کا دورۂ ایشیا منسوخ

شٹ ڈاؤن جاری،’ہیلتھ کیئر پر سمجھوتہ نہیں ہوگا‘

امریکہ: شٹ ڈاؤن جاری، مذاکرات ناکام

جان کیری کا کہنا تھا کہ امریکی کانگریس میں ریپبلیکنز کے ساتھ اختلاف جمہوریت کا حسن ہے تاہم انھوں نے کانگریس سے استدعا کی وہ اس بارے میں دوبارہ غور کرے۔

خیال رہے کہ امریکی صدر براک اوباما نے ملک میں بجٹ کی عدم منظوری کی وجہ سے وفاقی محکموں کی بندش یا ’شٹ ڈاؤن‘ کی وجہ سے ایشیائی ممالک کا دورہ مکمل طور پر منسوخ کر دیا تھا۔

امریکہ میں وفاقی حکومت کی سرگرمیاں پیر اور منگل کی درمیانی شب اس وقت جزوی طور پر معطل ہو گئی تھیں جب حزبِ اختلاف کی اکثریت والے ایوانِ نمائندگان سے آئندہ مالی سال کا بجٹ منظور نہ ہونے کے بعد وائٹ ہاؤس نے کچھ وفاقی محکموں کو کام بند کرنے کے احکامات جاری کیے تھے۔

صدر براک اوباما اور کانگریس کے رہنماؤں کے درمیان مالیاتی بل پاس کرنے کے معاملے پر وائٹ ہاؤس میں بدھ کو ہوئے مذاکرات ناکام ہوگئے تھے جس کی وجہ سے ملک میں ابھی تک شٹ ڈاؤن جاری ہے۔

اسی بارے میں