فیس بک دیکھتے دیکھتے دھڑام سے سمندر میں

Image caption ’جب اس خاتون کو سمندر سے نکالا گیا تو اس وقت بھی ان کے ہاتھ میں ان کو موبائل فون تھا‘

آسٹریلیا کے شہر میلبرن میں ایک خاتون اپنے فون پر فیس بک دیکھتے دیکھتے سمندر میں جا گریں اور ریسکیو ٹیم کو انھیں بچانے کے لیے سمندر میں کودنا پڑا۔

آسٹریلیئن براڈکاسٹنگ کارپوریشن کے مطابق یہ واقعہ پیر کی رات اس وقت پیش آیا جب پورٹ فلپ بے پر ایک خاتون اپنا فیس بک صفحہ دیکھتے ہوئے سمندر میں جا گریں۔

وہاں موجود لوگوں نے پولیس کو اطلاع دی جس نے 20 منٹ بعد سپیڈ بوٹ میں تائیوان سے تعلق رکھنے والی خاتون کو بچایا۔

سینیئر کانسٹیبل ڈین کیلی کے مطابق خاتون نے بعد میں پولیس کو بتایا کہ ان کو تیرنا نہیں آتا۔

پولیس کے مطابق ’جب اس خاتون کو سمندر سے نکالا گیا تو اس وقت بھی ان کے ہاتھ میں ان کو موبائل فون تھا ۔۔۔ خاتون نے پولیس سے معذرت کی اور کہا کہ وہ فون پر اپنا فیس بک پیج دیکھ رہی تھیں جب وہ سمندر میں جا گریں۔‘

پولیس نے بعد میں ایک بیان میں کہا کہ لوگوں کو پانی کے قریب سماجی رابطوں کی ویب سائٹیں استعمال کرنے میں احتیاط برتنی چاہیے۔

پولیس نے مزید کہا کہ اس واقعے میں کوئی مالی نقصان نہیں ہوا کیونکہ خاتون نے اپنا فون ہاتھ سے جانے نہیں دیا۔

اسی بارے میں