مصر: الجزیرہ کے صحافیوں کی حراست میں توسیع

Image caption مصری حکام الجزیرہ پر گذشتہ سال جولائی میں سابق صدر محمد مرسی کی معزولی کے بعد سے اخوان المسلمین کی بے جا حمایت کرنے کا الزام لگاتے ہیں

مصری حکام نے الجزیرہ انگلش ٹی وی نیٹ ورک کے تین صحافیوں کی حراست میں 15 روز کی توسیع کر دی ہے۔

قاہرہ میں پبلک پراسیکیوٹر کے ایک بیان کے مطابق ان تینوں افراد کے خلاف دہشت گرد تنظیم میں شمولیت اختیار کرنے اور اس تنظیم کو ساز و سامان فراہم کرنے کے علاوہ تین دیگر الزامات ہیں۔

گرفتار ہونے والے تین صحافیوں میں سے ایک آسٹریلوی شہری پیٹر گریسٹ ہیں جو کہ بی بی سی کے ساتھ بھی کام کر چکے ہیں۔ ان کے علاوہ کینیڈا کی شہریت رکھنے والے فدل فاہمی اور پیشکار بدر محمد شامل ہیں۔

ان کے علاوہ گرفتار کیے گئے ایک اور کیمرا مین کو رہا کر دیا گیا ہے۔

الجزیرہ انگلش کے ڈائریکٹر النستی کا کہنا تھا کہ صحافیوں کی یہ گرفتاریاں شرمناک تھیں اور ان کے خلاف لگائے الزامات بالکل جھوٹے ہیں۔

مصری حکام الجزیرہ پر گذشتہ سال جولائی میں سابق صدر محمد مرسی کی معزولی کے بعد سے اخوان المسلمین کی بے جا حمایت کرنے کا الزام لگاتے ہیں۔

اخوان المسلمین کو گذشتہ ہفتے دہشت گرد تنظیم قرار دیا گیا تھا۔ تنظیم کے کارکنان کے خلاف کارروائی جاری ہے۔ سینکڑوں مرسی حامیوں کو قتل کیا جا چکا ہے اور اخوان المسلمین کے ہزاروں کارکنوں کو گرفتار کیا جا چکا ہے۔

الجزیرہ نے 24 گھنٹے کی نشریات میں صدر مرسی کے حامیوں کا احتجاج دکھایا ہے اور ربا قتلِ عام کے واقعے کے عینی شاہدین کی کہانیاں سنائی ہیں جس میں اخوان المسلمین کے سینکڑوں کارکنان ہلاک ہوئے تھے۔ اس کے علاوہ چینل نے حکومتی کارروائی سے بچ جانے والے چند اسلام پسند رہنماؤں کے انٹرویو بھی دکھائے ہیں۔

اتوار کے روز ان چار صحافیوں کو قاہرہ کے ایک فائیو سٹار ہوٹل میں ان کے عبوری دفتر سے گرفتار کیا گیا۔

منگل کے روز کیمرا مین محمد فوزی کو رہا کر دیا گیا تاہم دیگر تینوں صحافیوں کو حراست میں ہی رکھا گیا ہے۔ اگر ان کے خلاف باضابطہ طور پر فردِ جرم عائد کی گئی تو ان کی حراست کو زیادہ طویل بھی کیا جا سکتا ہے۔

الجزیرہ کا کہنا ہے کہ ان کے صحافی قانون کے دائرے میں رہتے ہوئے مختلف قسم کی خبروں پر کام کر رہے تھے اور انھیں ان کے ساز و سامان سمیت فوری طور پر رہا کیا جائے۔

ادھر 15 فروری کو ایک عدالت اخوان المسلمین کے سیاسی ونگ فریڈم اینڈ جسٹس پارٹی کی تحلیل کے بارے میں ایک کیس کی سماعت کرے گی۔

اسی بارے میں