نیویارک کی سڑک پر طیارے کی ہنگامی لینڈنگ

Image caption ٹرانسپورٹ کے عملے نے ٹریفک روک کر سڑک خالی کرائی تاکہ طیارہ ہنگامی لینڈنگ کر سکے

امریکہ میں ایک چھوٹے طیارے کو ہنگامی حالات میں نیویارک کے علاقے برونکس کی ایک ہائی وے پر ایمرجنسی لینڈنگ کرنا پڑی۔

مقامی ذرائع ابلاغ کے مطابق یہ واقعہ سنیچر کو پیش آیا اور ایک انجن والے پائیپر ہوائی جہاز کی لینڈنگ سے قبل ٹریفک روک کر سڑک کو خالی کروا لیا گیا تھا۔

اس ہوائی جہاز پر تین افراد سوار تھے جو اس ہنگامی لینڈنگ کے دوران محفوظ رہے۔

حکام کا کہنا ہے کہ بظاہر اس جہاز کے انجن نے کام کرنا چھوڑ دیا تھا۔

یہ جہاز امریکی ریاست کنیٹیکٹ کے شہر ڈینبری سے اڑا تھا اور اسے امریکہ کے مجسمۂ آزادی کے گرد چکر لگانا تھے۔

اطلاعات کے مطابق طیارہ اس سفر کے بعد واپس آ رہا تھا کہ اس کے انجن میں خرابی پیدا ہوئی۔

نیویارک کے محکمۂ ٹرانسپورٹ کے ترجمان کے مطابق طیارے کو ڈولتا دیکھ کر دیگان ایکسپریس وے کی مرمت میں مصروف عملے نے ٹریفک روک کر سڑک خالی کرائی تاکہ وہ ہنگامی لینڈنگ کر سکے۔

اس موقع پر ہائی وے پر موجود ایک مسافر پال کولاڈو نے بی بی سی کو بتایا کہ وہ سڑک کی دوسری جانب سفر کر رہے تھے جب انھوں نے جہاز اترتے دیکھا۔

’جہاز مجھ سے دس فٹ کے فاصلے سے گزرا۔ مجھے یقین ہی نہیں آ رہا تھا کہ میں کیا دیکھ رہا ہوں۔ مجھے کوئی دھواں تو نہیں دکھائی دیا لیکن جہاز سڑک پر رگڑتا ہوا رکا۔‘

خبر رساں ادارے ایسوسی ایٹڈ پریس کے مطابق نیویارک کے میئر بل ڈی بلاسیو کا کہنا ہے کہ ’یہ معجزہ ہی تھا کہ کوئی فرد زخمی نہیں ہوا۔‘

.