چین: مسجد میں بھگدڑ مچنے سے14 ہلاک

Image caption بھگدڑ کا واقعہ ’ہُوئی‘ مسلمانوں اقلیتی کے علاقے میں پیش آیا

چین کی ایک مسجد میں بھگدڑ مچنے سے کم سے کم 14 افراد ہلاک ہوگئے ہیں۔

چین کے سرکاری میڈیا کے مطابق بھگدڑ کا یہ واقعہ ملک کے شمال مغربی علاقے ننگزيا میں پیش آیا۔

واقعے میں کم سے کم دس افراد شدید زخمی بھی ہوئے ہیں، جن میں سے چار کی حالت نازک بتائی جا رہی ہے۔

سرکاری خبر رساں ایجنسی شن ہوا مطابق یہ واقعہ اتوار کو اس وقت پیش آیا جب مسجد میں ایک مذہبی رہنما کو خراج تحسین پیش کرنے کے لیے منعقد پروگرام کے دوران روایتی لنگر تقسیم کیا جا رہا تھا۔

مقامی انتظامیہ نے اس واقعے کی وجوہات معلوم کرنے کے لیے تحقیقات شروع کر دی ہیں۔

اس علاقے میں ’ہوئی‘ مسلمان رہتے ہیں، جو چین کے مسلم اقلیتوں میں سے ایک ہیں۔

جس علاقے میں بھگدڑ کا وقعہ پیش آیا ہے اس قصبے کا نام شجی بتایا گیا ہے اور یہ گویوان شہر سے 60 کلومیٹر کے فاصلے پر ہے۔

بھگدڑ کے بعد جائے وقوعہ کی تصاویر میں کپڑے اور جوتے بکھرے ہوئے دیکھے گئے ہیں۔

اسی بارے میں