پوپ فرانسس 19 نئے کارڈینلز مقرر کریں گے

Image caption پوپ فرانسس ان کارڈینلز کو ایک تقریب میں 22 فروری کو باقاعدہ مقرر کریں گے

رومن کیتھولک عیسائیوں کے روحانی پیشوا پوپ فرانسس شانزدہم اگلے مہینے 19 کارڈینلز مقرر کریں گے۔

ان تقرریوں میں ہیٹی، برکینافاسو کے چرچ کے سربراہان بھی شامل ہیں۔

کارڈینل جو لال رنگ کی ٹوپی اور چوغے پہنتے ہیں پوپ کے بعد رومن کیتھولک چرچ میں اعلیٰ ترین عہدے پر فائز ہوتے ہیں۔

ان تعینات کیے جانے والے کارڈینلز میں سے 16 اسی سال سے کم عمر کے ہیں جو پوپ کے جانشین کے انتخاب کے لیے اس احاطے میں داخل ہو سکتے ہیں جس میں صرف مخصوص عہدیدار داخل ہو سکتے ہیں۔

ان کارڈینلز کو ایک تقریب میں 22 فروری کو مقرر کیا جائے گا۔

80 سال سے زیادہ عمر کے پادری سپین، اٹلی اور کیریبین جزیرے سینٹ لوسیا سے تعلق رکھتے ہیں اور یہ کارڈینل ایمریٹس کا خطاب اپنائے گے۔

پوپ فرانسس نے ان نئے کارڈینلز کی تقرری کا اعلان سینٹ پیٹرز سکوائر میں اپنے ہفتہ وار خطاب میں کیا۔

یہ کارڈینلز دنیا بھر سے تعلق رکھ سکتے ہیں جیسا کہ جرمنی، برطانیہ، نکاراگوا، کینیڈا، برازیل، ارجنٹینا، جنوبی کوریا، چلی اور فلپائن۔

بی بی سی کے ایلن جونسٹن توقع کے مطابق ان میں سے بہت کم نام معروف اور ویٹیکن میں اثر رکھنے والے لوگوں کے ہیں۔

Image caption پوپ فرانسس نے ان نئے کارڈینلز کی تقرری کا اعلان سینٹ پیٹرز سکوائر میں اپنے ہفتہ وار خطاب میں کیا

ویٹیکن کے ترجمان کے مطابق یہ سب پوپ کی اس کوشش کا نتیجہ ہے جس میں پوپ دنیا کے غریب ممالک سے تعلق رکھنے والے افراد کو چرچ کے مشن میں نمایاں مقام دلائیں۔

ویسٹ منسٹر کے آرچ بشپ ونسنٹ نکولس کو بھی نئے کارڈینل کے طور پر مقرر کیا گیا۔

بشپ ونسنٹ نکول نے بتایا کہ وہ اس اعزاز سے بہت متاثر ہوئے ہیں جو پوپ نے کیتھولک چرچ آف انگلینڈ اور ویلز کو بخشا ہے۔

اسی بارے میں