برطانیہ اور فرانس کا لڑاکا ڈرونز کا مشترکہ منصوبہ

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption اجلاس کے باقاعدہ ایجنڈے پر سب سے اہم معاملہ دفاعی تعاون کا ہے

فرانس کے صدر اور برطانوی وزیراعظم لڑاکا ڈرون طیاروں کے منصوبے میں مشترکہ سرمایہ کاری کرنے کا اعلان کرنے والے ہیں۔

یہ معاملہ جمعہ کو فرانسیسی صدر فرانسوا اولاند کے برسرِاقتدار آنے کے بعد منعقد ہونے والے پہلے اینگلو فرینچ سربراہی اجلاس میں زیرِ بحث آئے گا۔

اوکسفرڈ شائر میں برطانوی شاہی فضائیہ کے اڈے پر منعقدہ اجلاس میں دونوں رہنما ڈرونز کے علاوہ جوہری توانائی کے پرامن استعمال کے بارے میں تحقیق اور خلائی و سیٹیلائٹ ٹیکنالوجی میں تعاون پر بھی معاہدے کریں گے۔

خبر رساں ادارے روئٹرز کے مطابق اس اجلاس کے باقاعدہ ایجنڈے پر سب سے اہم معاملہ دفاعی تعاون کا ہے اور اس میں بارہ کروڑ پاؤنڈ مالیت کی اس تحقیق کی رونمائی کی جائے گی جس کی بنیاد پر برطانیہ اور فرانس کا ڈرونز کی تیاری کا مشترکہ منصوبہ تیار کیا گیا ہے۔

یہ دونوں رہنما اس منصوبے کے تحت تیار کیے گئے ایک ڈرون کا معائنہ بھی کریں گے۔

تاحال اس بارے میں فیصلہ نہیں کیا گیا کہ کونسی کمپنیاں اس منصوبے میں شریک ہوں گی۔

جمعہ کو ہونے والے اجلاس میں 50 کروڑ پاؤنڈ مالیت کے بحری جہاز شکن میزائلوں کی خریداری کے منصوبے کا اعلان بھی کیا جائے گا۔ یہ میزائل بے اے ای سسٹمز اور ایئر بس گروپ کے کنسورشیم نے تیار کیے ہیں۔

ذرائع نے بی بی سی کو بتایا ہے کہ اس اجلاس میں برطانوی وزیراعظم فرانسسیسی صدر پر زور دیں گے کہ وہ یورپی یونین میں مجوزہ اصلاحات کی حمایت کریں۔

ڈیوڈ کیمرون ایک ’زیادہ لچکدار‘ یورپی یونین کے خواہاں ہیں تاہم فرانسوا اولاند کے قریبی ذریعے کا کہنا ہے کہ وہ یورپی معاہدوں میں تبدیلیوں کی حمایت کا ارادہ نہیں رکھتے ہیں۔

اسی بارے میں