قطر:’دو برس میں 500 سے زیادہ بھارتی مزدور ہلاک‘

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption قطر میں بھارتی سب سے بڑی غیرملکی کمیونٹی ہیں

ایک برطانوی اخبار میں شائع ہونے والی رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ سنہ 2012 سے اب تک عرب ملک قطر میں پانچ سو سے زیادہ بھارتی مزدور ہلاک ہوئے ہیں۔

برطانوی اخبارگارڈین کا کہنا ہے کہ قطر میں بھارتی سفارت خانے نے ان اعداد و شمار کی تصدیق کی ہے لیکن ان افراد کی موت کی وجوہات کے بارے میں معلومات فراہم نہیں کیں۔

قطر کی وزارتِ محنت نے کہا ہے کہ ان ہلاکتوں میں قدرتی اموات کے علاوہ، سڑکوں پر حادثات اور کام کی جگہ پر اموات کے معاملے بھی شامل ہو سکتے ہیں۔

سمجھا جاتا ہے کہ ان میں زیادہ تر اموات 2022 میں ہونے والے فٹ بال ورلڈ کپ سے متعلق تعمیراتی منصوبوں میں ہوئی ہیں۔

اس ماہ کے شروع میں رپورٹ آئی تھی کہ گزشتہ ایک سال کے دوران قطر میں کام سے متعلق حادثات میں 185 نیپالي شہری مارے گئے ہیں۔

Image caption قطر ورلڈ کپ کے منتظمین نے مزدوروں کے حقوق سے متعلق نیا چارٹر جاری کیا ہے

فٹبال کی عالمی تنظیم فیفا نے قطر سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ اپنے یہاں کام کے حالات میں بہتری لائے اور حال ہی میں فیفا کے مطالبے پر ورلڈ کپ کے منتظمین نے مزدوروں کے حقوق سے متعلق نیا چارٹر جاری کیا ہے۔

خبر رساں ایجنسی اے ایف پی کے مطابق قطر کی قومی انسانی حقوق کمیٹی کے افسر علی بن سمیخ المری نے منگل کو کہا کہ قطر میں جس تعداد میں بھارتی کارکن رہتے ہیں، اس حساب سے ساڑھے چار سو افراد کی موت عام بات ہے۔

قطر میں بھارتی سب سے بڑی غیرملکی کمیونٹی ہیں اور وہاں پانچ لاکھ بھارتی رہتے ہیں۔ یہ تعداد قطر کے اپنے باشندوں کے مقابلے میں دوگنی ہے۔

بھارتی سفارت خانے کے اعداد و شمار کے مطابق قطر میں اوسطاً ایک ماہ میں 20 تارکین وطن کی موت ہوئی اور 2012 میں 237 اور 2013 میں 218 لوگ ہلاک ہوئے۔

علی المری نے اے ایف پی سے بات کرتے ہوئے ان اموات کے حالات پر وضاحت کا مطالبہ کیا اور کہا کہ یہ خبریں ’قطر کے خلاف مہم‘ کا حصہ ہیں۔

اسی بارے میں