بل گیٹس ایک بار پھر دنیا کے امیر ترین فرد بن گئے

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption گزشتہ 20 برسوں میں 15 برس گیٹس دنیا کے سب سے امیر آدمی بنے ہیں

ٹیکنالوجی کمپنی مائیکروسافٹ کے بانی امریکہ کے بل گیٹس نے ایک مرتبہ پھر دنیا کے امیر ترین افراد کی فہرست میں پہلا مقام حاصل کر لیا ہے۔

انہیں یہ مقام مالیاتی جریدے فوربز کی دنیا کے ارب پتی افراد کی فہرست میں دیا گیا ہے۔

فوربز کے اندازوں کے مطابق اس سال بل گیٹس کی دولت اور اثاثوں کی مالیت 76 ارب ڈالر ہوگئی ہے جو کہ گذشتہ سال 67 ارب ڈالر تھی۔

امریکی جریدے کے مطابق گزشتہ 20 برسوں میں 15 برس گیٹس دنیا کے سب سے امیر آدمی بنے ہیں۔

اس سال انھوں نے میکسیکو کے ٹیلی کام سیکٹر کے صنعت کار کارلوس سلم کی جگہ لی ہے جو اس فہرست میں اب دوسرے نمبر پر ہیں۔

فوربز کے مطابق اس وقت دنیا میں 1،645 ارب پتی ہیں جو کہ خود ایک ریکارڈ ہے اور اس سال کی فہرست میں 20 امیر ترین افراد میں وہی لوگ شامل ہو سکے ہیں جن کے اثاثے 31 ارب ڈالر یا اس سے زیادہ ہیں جبکہ گزشتہ سال اس کے لیے 23 ارب ڈالر کے اثاثے کافی تھے۔

2014 کے ارب پتی افراد کی فہرست میں ٹیکنالوجی کی دنیا سے وابستہ افراد کی تعداد زیادہ ہے اور سب سے زیادہ دولت کمانے کے معاملے میں سب سے آگے فیس بک کے بانی مارک زكربرگ رہے جن کے اثاثوں کی مالیت گزشتہ سال سے تقریباً دوگنی ہو کر 28 ارب 50 کروڑ ڈالر ہوگئی ہے۔

فیس بک کے چیف ایگزیکیٹو افسر شیرل سینڈبرگ بھی اس فہرست میں پہلی بار شامل ہوئے ہیں۔ اس کے علاوہ واٹس ایپ کے بانی جین كام اور برائن ایكٹن کا نام بھی ارب پتی افراد کی فہرست میں شامل ہے۔ وہ دونوں بالترتیب 202 ویں اور 551 ویں مقام پر ہیں۔

ان کے ارب پتی بننے میں کلیدی کردار اس سودے کا ہے جس کے تحت فیس بک نے حال ہی میں واٹس ایپ کو 19 ارب ڈالر میں خریدا ہے۔

اس فہرست میں سب سے زیادہ ارب پتی امریکہ کے ہیں اور کل 492 امریکی ارب پتیوں کو اس فہرست میں جگہ ملی ہے.

امریکہ کے بعد سب سے زیادہ کل 468 ارب پتی یورپ کے ہیں جبکہ ایشیا کے کل 444 ارب پتیوں کو اس فہرست میں جگہ دی گئی ہے۔

فوربز کی اس فہرست میں 50 امیر ترین افراد میں واحد بھارتی مکیش امبانی ہیں جو 18 ارب 60 کروڑ ڈالر کے اثاثوں کے ساتھ اس فہرست میں 40 ویں مقام پر ہیں۔

اسی بارے میں