کراچی دنیا کا دوسرا سستا ترین شہر

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption رپورٹ میں دنیا کے 93 ملکوں کے 140 شہروں کا جائزہ لیا گیا

ایک تازہ اقتصادی رپورٹ سے معلوم ہوا کہ دنیا کا سب سے سستا شہر ممبئی ہے جب کہ اس فہرست میں دوسرا نمبر پاکستانی شہر کراچی کا ہے۔

اس کے بعد پانچ سستے ترین شہروں میں بھارت کے شہر دہلی، نیپال کے شہر کٹھمنڈو اور شام کے شہر دمشق کا نام آتا ہے۔

تقریباً دو سو ممالک کی معاشی سرگرمی پر نظر رکھنے والے ادارے اکانومسٹ انٹیلی جنس یونٹ (ای آئی یو) کے مطابق دنیا کے 131 شہروں میں رہائش اور خورد و نوش کے خرچ کے لحاظ سےکراچی دوسرے نمبر پر ہے۔

دوسری جانب مشرقِ بعید کا شہر سنگاپور دنیا کا سب سے مہنگا شہر قرار پایا ہے۔

شہر کی مضبوط کرنسی کے ساتھ ساتھ کار رکھنے پر آنے والے اخراجات اور دیگر ضرورتوں کے حصول کے لیے ادا کی جانے والی اونچی قیمتوں کی وجہ سے مجموعی طور پر سنگاپور رہائش کے لیے سب سے مہنگا شہر ٹھہرا ہے۔

اس کے ساتھ ہی ملبوسات کی خریداری کے لیے بھی یہ دنیا کا سب سے مہنگا شہر ثابت ہوا ہے۔ واضح رہے کہ اس سے قبل جاپان کا شہر ٹوکیو سنہ 2013 میں دنیا کا مہنگا ترین شہر تھا۔

سنگاپور کے علاوہ پہلے پانچ سب سے مہنگے شہروں میں فرانس کا شہر پیرس، ناروے کے دارالحکومت اوسلو، سوئٹزرلینڈ کا شہر زیورخ اور آسٹریلیا کا شہر سڈنی کے نام شامل ہیں۔

ای آئی یو کے ذریعے عالمی پیمانے پر رہائش پر آنے والے اخراجات کے سروے میں امریکہ کے شہر نیویارک کو بنیاد بناکر سروے کیا جاتا ہے اور اس میں 400 مختلف چیزوں کی قیمتوں کو نظر میں رکھا گیا۔

اس سال کے دس سب سے مہنگے شہروں میں زیادہ تر ایشیائي اور آسٹریلوی شہر شامل ہیں۔ اس تازہ رپورٹ کے ایڈیٹر جون کوپ سٹیک کا کہنا ہے: ’پہلے ہی سے مہنگے یورپی شہروں میں بہتری کے رجحانات اور ایشیائی شہروں میں مسلسل بہتری کے نتیجے میں ان دونوں خطوں سے زیادہ سے زیادہ مہنگے شہر سامنے آر رہے ہیں۔‘

انھوں نے یہ بھی تسلیم کیا کہ ’ایشیا اور بطور خاص برصغیر میں دنیا کے سب سے سستے شہر بھی مسلسل نظر آ رہے ہیں۔‘

زیادہ تر ایشیائی شہر خوردنی اشیا کی زیادہ قیمتوں کے سبب مہنگے شہروں کی فہرست میں ہیں اور ٹوکیو آج بھی روز مرہ کی اشیائے خوردنی کے لیے دنیا کے مہنگے ترین شہروں سر فہرست ہے۔

بہرحال تمام ایشیائی شہر مہنگے نہیں ہیں۔ بھارت کے دونوں بڑے شہر دہلی اور ممبئی دنیا کے سب سے سستے شہروں میں شامل ہیں۔

ممبئی میں قیمتیں فی کس آمدنی میں وسیع خلیج کے نتیجے میں کم ہیں اور بہت سے شہروں میں کم آمدنی کی وجہ سے لوگ کم خرچ کرتے ہیں جبکہ حکومت کی جانب سے دی جانے والی مراعات سے ان کا کام چل رہا ہے۔

برصغیر کے باہر شام کے شہر دمشق میں اخراجات میں سب سے زیادہ کمی دیکھی گئی ہے اور یہ دنیا کا چوتھا سستا ترین شہر ہے۔ ملک میں جاری خانہ جنگی کے سبب قیمتوں میں زبردست کمی آئی ہے۔

اسی بارے میں