شمالی کوریا نے فوجی مشقیں شروع کر دیں

تصویر کے کاپی رائٹ AFP KCNA
Image caption شمالی کوریا کے رہنما کم جونگ ان نے گذشتہ ماہ اسی قسم کی فوجی مشق کا دوربین سے مشاہدہ کیا

جنوبی کوریا نے کہا ہے کہ شمالی کوریا نے دونوں ممالک کے درمیان متنازع بحری سرحد پرگولہ باری کی مشق شروع کر دی ہے۔

ایک ماہ کے اندر ایسا دوسری مرتبہ ہو رہا ہے جب شمالی کوریا اس قسم کی فوجی مشق کررہا ہے۔

جنوبی کوریا کی وزارتِ دفاع نے کہا ہے کہ انھیں یہ اطلاع دی گئی تھی کہ شمالی کوریا منگل کو اپنی متنازع بحری سرحد کے قریب گولہ باری کی فوجی مشق کرے گا۔

جنوبی کوریا کی وزارتِ دفاع نے کہا کہ یہ مشق کوریائی خطے کے مغرب میں واقع جزائ‏‏ر کے دو جھرمٹوں میں کی جا رہی ہے۔

جنوبی کوریا کے ایک ترجمان نے بتایا کہ ان کی ’فوج بھی پوری طرح سے تیار ہے۔‘

واضح رہے کہ مارچ کے اختتام پر اسی قسم کی ایک فوجی مشق کے نتیجے میں دونوں ممالک شمالی اور جنوبی کوریا کی فوجوں کے درمیان گولہ باری کا تبادلہ ہوا تھا۔

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption حال ہی میں شمالی کوریا نے درمیانی رینج کے دو بیلسٹک میزائلوں کا تجربہ بھی کیا ہے

جنوبی کوریا کی وزارتِ دفاع کے ترجمان نے بتایا تھا کہ شمالی کوریا نے اس مشق میں تقریباً 500 گولے فائر کیے جن میں سے ایک سو جنوبی کوریا کی حدود میں گرے۔ انھوں نے بتایا تھا کہ جنوبی کوریا نے جواب میں 300 گولے داغے۔

شمالی کوریا کی جانب سے یہ تازہ وارننگ ایسے وقت میں آئی ہے جب سیٹیلائٹ سے ملنے والی تصاویر سے یہ عندیہ ملتا ہے کہ شمالی کوریا چوتھے جوہری بم کا تجربہ کرنے والا ہے۔

واضح رہے کہ امریکی صدر براک اوباما نے گذشتہ ہفتے جنوبی کوریا کا دورہ کیا تھا اور شمالی کوریا نے اس دورے کی سخت مخالفت کی تھی۔

واشنگٹن نے پیانگ یانگ سے اپیل کی تھی کہ وہ اپنے جوہری پروگرام کو ترک کردے۔

اس ہفتے کے اوائل میں جنوبی کوریا کی فوج نے کہا تھا کہ اس نے شمالی کوریا کے جوہری تجربے کے مقام پر بہت سرگرمیاں نوٹ کی ہیں جن سے اندازہ ہوتا ہے کہ یا تو وہ جوہری تجربہ کر رہا ہے یا تجربہ کرنے کا بہانہ بنا رہا ہے۔

یاد رہے کہ حال ہی میں شمالی کوریا نے درمیانی رینج کے دو بیلسٹک میزائلوں کا تجربہ بھی کیا ہے۔

اسی بارے میں