جرمنی میں چار نایاب سفید شیروں کی پیدائش

تصویر کے کاپی رائٹ epa
Image caption جرمنی کے سرکس کرون میں چار نئے نایاب سفید شیر پیدا ہوئے ہیں جن کی قسم قدرت میں صرف جنوبی افریقہ میں پائی جاتی ہے۔

جرمنی کے شہر میونخ میں ایک مادہ شیر نے چار سفید شیر کے بچوں کو جنم دیا ہے۔

یہ بچے بدھ کے روز میونخ شہر کے ’سرکس کرون‘ میں شامل ایک شیرنی کے ہاں پیدا ہوئے۔

واضح رہے کہ یہ آلبینو نہیں ہیں۔ ان کی ماہ ’پرنسس‘ اور باپ ’کنگ ٹونگا‘ میں ایک ایسا جین ہے جس سے کھال کا رنگ سفید ہو جاتا ہے۔

سفید شیروں کے تحفظ کے لیے کام کرنے والی تنظیم گلوبل وائلڈ لائف پروٹیکشن ٹرسٹ کے مطابق اس قسم کے شیر قدرتی طور پر صرف جنوبی افریقہ کے ٹمباواتی بُش کے علاقے میں ملتے ہیں۔

اس کے ساتھ ساتھ کئی سو سفید شیر چڑیا گھروں اور سرکسوں میں پائے جاتے ہیں۔

سرکس کرون کی ترجمان سوزین ماتزیناؤ نے بی بی سی کو بتاتا کہ شیر کے بچے کم از کم چار سالوں تک سرکس میں شریک نہیں ہوں گے۔ پہلا سال یہ اپنی ماہ کے ساتھ گزاریں گے اور پھر دیگر شیروں کے ساتھ ملیں گے اور سرکس کے حوالے سے تربیت حاصل کریں گے۔

سرکس کے شیروں کے ایوارڈ یافتہ تربیت کار مارٹن لیسی کا تعلق برطانیہ سے ہے۔ان کا کہنا ہے کہ ’جب ایک شیر کو اس کا نام دیا جاتا ہے تو پھراسےٹریننگ کے لیے بھیجا جاتا ہے۔‘

انھوں نے مزید کہا کہ بچوں کو چار سے پانچ ہفتوں تک نام دے دیا جاتا ہے اور اس دوران ٹرینر ’ان کا کردار یا فطرت سمجھنے کے لیے انھیں دیکھتا ہے۔‘

کنگ ٹونگا کوایک سعودی شہزادے نے تحفہ کے طور پر سرکس کو دیا تھا۔ اس شیر نے اب تک چار شیرنیوں کے ساتھ بچے پیدا کیے ہیں جن میں دو سفید رنگ کی اور دو گولڈن رنگ کی ہیں۔

مارٹن لیسی کہتے ہیں کہ کنگ ٹونگا ’اپنی شوہر ہونے کی ذمہ داریاں بخوبی نباہ رہے ہیں۔‘

اسی بارے میں