کرائیمیا: ’پوتن‘ ٹوائلٹ پیپرز سے لوگ ناخوش

تصویر کے کاپی رائٹ sevastopol news

کرائیمیا میں ایک ٹوائلٹ پیپر کے نام کے حوالے سے خاصی لے دے شروع ہو گئی ہے کیونکہ اس کا نام روسی صدر ولادامیر پوتن کے نام سے مماثلت رکھتا ہے۔

ریڈیو فری یورپ کے مطابق کرائیمیا کے مشہور شہر مسفروپول میں صارفین ’وی وی‘ نامی ٹوائلٹ پیپرز سے خوش نہیں کیونکہ یہ دونوں حروف روسی صدر کے نام کے پہلے دو ناموں جیسے ہیں۔ یاد رہے کہ صدر پوتن کا پورا نام ’ولادامیر ولادامیروچ پوتن ہے اور یوں ’وی وی‘ ان کے نام میں بھی شامل ہیں۔

اس برس کے اوائل میں ایک پرتشدد عوامی تحریک کے بعد یوکرین کے روس نواز صدر وکٹر یانوکووچ کو اقتدار سے الگ ہونا پڑا تھا جس پر روس نے ایک فوجی کارروائی کے بعد اپنی سرحد سے ملحق کرائیمیا پر قبضہ کر لیا تھا۔ بین الاقوامی سطح پر روس کے اس اقدام کی شدید مخالفت ہوئی تھی۔

کرائیمیا میں روسی بولنے والے لوگ اکثریت میں ہیں وہ ماسکو کے زبردست حامی ہیں۔ اسی وجہ سے صارفین کی ایک بڑی تعداد کو مذکورہ ٹوائلٹ پیپر کی صدر پوتن کے نام سے نسبت بالکل پسند نہیں ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service

کرائیمیا کے روزنامے ’سواتوپول‘ کے مطابق ایک صارف نے شدید غصے کا اظہار کرتے ہوئے بتایا کہ ’وی وی‘ ٹوائلٹ رول بنانے والی کمپنی نے یہ حرکت جان بوجھ کر کی ہے اور انھوں نے ٹشوز پر ان کے وطن جزیرۂ نما کرائیمیا کا نقشہ بھی چھاپا ہے۔ اس صارف کے بقول کمپنی یہ چاہتی ہے کہ کرائیمیا کے نقشے کو بیت الخلا جیسی جگہ پر استعمال کر کے گٹر میں بہایا جائے۔

ٹشو پیپرز کے خلاف جاری مہم کے ناقدین کا کہنا ہے کہ شاید کپمنی نے دانستہ طور پر ایسی کوئی حرکت نہیں جس کا مقصد کسی کی تضحیک ہو کیونکہ انھوں نے کرائیمیا کے نقشے کے نیچے جلی حروف میں صارفین سے یہ بھی کہا ہے کہ وہ ’کرائیمیا کی اپنی مصنوعات‘ استعمال کیا کریں۔