شمالی کوریا کے رہنما کم جونگ آن منظر عام پر

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption شمالی کوریا کے رہنما کی صحت کے بارے میں قیاس آرائیاں کی جا رہی تھیں

شمالی کوریا کے رہنما کم جونگ آن تین ستمبر کے بعد پہلی مرتبہ منظر عام پر آئے ہیں۔

شمالی کوریا کی سرکاری ایجنسی ’کے سی این اے‘ کے مطابق کم جونگ آن نے منگل کو سائنسدانوں کے لیے تمعیر کی جانے والے ایک رہائشی منصوبے کا معائنہ کیا اور موقعے پر ہدایات جاری کئیں۔

شمالی کوریا کے ایک اخبار روڈنگ سنمن نے کم جونگ آن کی کئی تصویر شائع کئیں جن میں انھیں چھڑی کی مدد سے رہائشی منصوبے کا معائنہ کرتے ہوئے دکھایا گیا۔

شمالی کوریا کے 32 سالہ رہنما کے منظر عام سے غائب ہونے سے بہت سی قیاس آرائیاں جنم لے رہی تھیں۔

کچھ لوگوں نے کم جونگ آن کے اقتدار پر کنٹرول کے بارے میں بھی شکوک و شبہات ظاہر کرنا شروع کر دیے تھے۔

ان کی صحت کے حوالے سے بھی شبہات ظاہر کیے جارہے تھے لیکن اخبارات میں شائع ہونے والی تصویر میں وہ خوش و خرم نظر آئے۔

اتوار کو لندن میں شمالی کوریا کے سفیر نے بی بی سی کو بتایا کہ کم جونگ آن بالکل صحت مند ہیں۔

کے سی این اے نے اطلاع دی کہ کم جونگ آن کو ویسونگ کے رہائشی منصوبے کے بارے میں بریفنگ دی گی۔ ان رہائشی عمارتوں کا باہر سے معائنہ کرتے ہوئے کم جونگ آن نے ان کی تعمیری معیار کی تعریف کی اور کہا کہ یہ بہت دلکش ہیں۔

یہ بھی کہا گیا ہے کہ کم جونگ آن نے نئی تعمیر کردہ قدرتی توانائی کے انسٹی ٹیوٹ کا بھی معائنہ کیا۔

سرکاری خبر رساں ادارے پر جاری کردہ تصاویر پر منگل کی تاریخ درج تھی لیکن یہ نہیں کہا گیا کہ کم جونگ آن نے یہ معائنہ کس دن کیا۔

کم جونگ آن کے منظر عام سے غائب رہنے کے دوران شمالی کوریا کی دو سرکاری تقریبات منعقد ہوئیں جن میں دس اکتوبر کو کوریا کی ورکرز پارٹی کی سالگرہ اور نو ستمبر کو شمالی کوریا کے قیام کی سالگرہ کا دن بھی شامل تھا۔

مبصرین کا کہنا تھا کہ یہ دونوں دن شمالی کوریا کے سیاسی کلینڈر میں بڑی اہمیت کے حامل ہیں اور ان میں کم جونگ آن کی شرکت بڑی اہم ہوتی ہے۔

کم جونگ آن نے اپنے والد کم جونگ ال کی دسمبر سنہ 2011 میں وفات کے بعد پارٹی اور ملک کی قیادت سنبھالی تھی۔

سنہ 2012 میں فوج میں اعلیٰ سطح کی تبدیلیوں کے بعد ان کو فوج کا اعلیٰ ترین عہدہ مارشل دیا گیا تھا۔

دسمبر سنہ 2013 میں انھوں نے اپنے چچا چنگ سونک تھیک کو موت کی سزا دی تھی جن کے بارے سرکاری ذرائع ابلاغ کا کہنا تھا کہ وہ بغاوت کا منصوبہ بنا رہے تھے۔

اسی بارے میں