دولتِ اسلامیہ کے جنگجو جنگی جہاز اڑائیں گے

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption عینی شاہدین نے حلب کے فوجی ہوائی اڈے کے گرد جہاز اڑتے دیکھے ہیں

شام میں جاری لڑائی کو مانیٹر کرنے والے برطانیہ میں مقیم ایک سرگرم گروپ نے کہا ہے کہ منحرف عراقی پائلٹ شام میں دولتِ اسلامیہ کے جنگوؤں کو جنگی جہاز اڑانے کی تربیت دے رہے ہیں۔ دولتِ اسلامیہ کے قبضے میں اس وقت تین جنگی جہاز ہیں۔

سیریئن آبزرویٹری فار ہیومن رائٹس (ایس او ایچ آر) نے کہا ہے کہ عینی شاہدین نے حلب کے فوجی ہوائی اڈے کے گرد جہاز اڑتے دیکھے ہیں۔

دریں اثناء عراقی فورسز نے تکریت کے قریب دولتِ اسلامیہ کے شدت پسندوں پر حملہ کیا ہے۔ اس شہر پر دولتِ اسلامیہ نے اس سال قبضہ کر لیا تھا۔

ایس او ایچ آر کے سربراہ رامی عبدالرحمان نے کہا کہ دولتِ اسلامیہ سابق صدر صدام حسین کے دور کے پائلٹوں کو استعمال کر رہی ہے تاکہ وہ شام میں جنگجوؤں کو جنگی جہاز اڑانا سکھائیں۔

انھوں نے کہا کہ لوگوں نے یہ پروازیں دیکھی ہیں، وہ کئی مرتبہ ایئرپورٹ سے اڑی ہیں اور آسمان پر چکر لگانے کے بعد واپس آئی ہیں۔‘

ابھی تک اس بات کی تصدیق نہیں ہو سکی کہ کتنے پائلٹ منحرف ہوئے ہیں۔

قاہرہ سے بی بی سی کی نامہ سیلی نبیل کہتی ہیں کہ دولتِ اسلامیہ کے پاس اس وقت تین جہاز ہیں جو اس نے حلب اور رقہ کی لڑائی کے بعد قبضے میں کیے تھے۔

اسی بارے میں