’آپ جیسے آئرش افراد کو نوکری نہیں دیتے‘

تصویر کے کاپی رائٹ
Image caption 26 سالہ کیٹی نے بی بی سی کو بتایا کہ ان کو ای میل پڑھ کر پہلے تو یقین ہی نہیں آیا

آئرلینڈ کی ایک سکول ٹیچر نے جنوبی کوریا کے دارالحکومت سیول میں نوکری کی درخواست دی لیکن ان کو آئرلینڈ کے لوگوں کی ’شراب نوشی کی عادت‘ کے باعث مسترد کر دیا گیا۔

کیٹی ملرینن کو ایجنسی نے بتایا کہ سکول آئر لینڈ سے تعلق رکھنے والے لوگوں کو نوکری نہیں دیا کرتا۔

26 سالہ کیٹی نے بی بی سی کو بتایا کہ ان کو پہلے تو ای میل پڑھ کر یقین ہی نہیں آیا۔

’جب آپ نوکری کے لیے درخواست دیتے ہیں تو عام طور پر انھوں نے اگر نوکری نہیں دینی تو وہ جواب ہی نہیں دیتے۔ یا پھر لہجے کی بنیاد پر کسی خاص خطے کے لوگوں کو فوقیت دیتے ہیں۔ لیکن یہ تو پہلی بار ہو رہا ہے۔ ای میل نہایت مختصر ہے۔ پہلے تو میں ای میل پڑھ کر ہنس دی۔ لیکن بعد میں میرا دل چاہا کہ میں ایک غصے والا جواب لکھوں۔‘

کیٹی نے ستمبر میں اشتہار دیکھ کر اس نوکری کے لیے درخواست دی۔ انھوں نے اشتہار دینے والی ایجنسی کو بتایا کہ وہ تین سال سے بارسلونا، اوکسفرڈ، ابو ظہبی اور جنوبی کوریا میں انگریزی پڑھا رہی ہیں۔

پچھلے ہفتے مجھے ای میل آئی ہے جس میں لکھا تھا: ’معذرت کے ساتھ آپ کو مطلع کیا جا رہا ہے کہ سکول شراب نوشی کی عادت کے باعث آپ جیسے آئرش افراد کو نوکری نہیں دیتا۔‘

کیٹی کو اب نوکری مل گئی ہے اور وہ اس ای میل پر ہنستی ہیں۔

اسی بارے میں