نیویارک: برفانی طوفان کے بعد اب سیلاب کا خطرہ

Image caption ریاست نیویارک کے مغربی علاقوں میں برفانی طوفان سے 13 افراد ہلاک ہوئے جبکہ کئی علاقوں میں اب بھی کئی فٹ برف موجود ہے

امریکی محکمۂ موسمیات نے خبردار کیا ہے کہ شمال مشرقی امریکہ میں گذشتہ چند دن کے دوران ہونے والی شدید برفباری کی وجہ سے اب متعدد علاقوں میں سیلاب آنے کا خطرہ ہے۔

حکام کا کہنا ہے کہ برفباری تھمنے کے بعد اب ریاست نیویارک میں مختلف مقامات پر شدید بارش کا امکان ہے۔

انھوں نے خدشہ ظاہر کیا ہے کہ پگھلتی برف اور بارش کے پانی کی وجہ سے نشیبی علاقوں میں سیلاب آ سکتا ہے۔

نیویارک میں حکام نے عمارتوں کے منہدم ہونے کا خدشہ بھی ظاہر کیا ہے اور کہا ہے کہ جن عمارتوں کی چھتوں پر اب بھی برف کے ڈھیر ہیں وہ بارش کے دوران گر سکتی ہیں کیونکہ بارش کے دوران ان چھتوں پر پہلے سے موجود وزن میں اضافے ہو جائے گا۔

ریاست نیویارک کے مغربی علاقوں میں برفانی طوفان سے 13 افراد ہلاک ہوئے جن میں سے زیادہ تر سخت موسم یا پھر برف ہٹانے کے عمل کے دوران دل کا دورہ پڑنے سے مارے گئے۔

برفانی طوفان سے بفلو شہر سب سے زیادہ متاثر ہوا جہاں چھ فٹ سے زیادہ برف پڑی۔

طوفان کے خاتمے کے بعد بھی بفلو شہر کے کچھ حصوں میں کئی فٹ برف موجود ہے۔

نیویارک کے علاوہ مشی گن اور نیو ہیمپشائر سے بھی کم از کم دو افراد کے سخت موسم کی وجہ سے ہلاک ہونے کی اطلاع ہے یوں امریکہ بھر میں طوفان کی وجہ سے 27 افراد مارے گئے۔

نیویارک کے گورنر اینڈریو کوومو نے اس برفانی طوفان کو ’ایک تاریخی واقعہ‘ قرار دیتے ہوئے کہا تھا کہ اس دوران کئی پرانے ریکارڈ ٹوٹیں گے۔

اسی بارے میں